حبس بے جا کیس،عدالت کا معذور شہری کو بیوی سمیت پیش کرنیکا حکم

حبس بے جا کیس،عدالت کا معذور شہری کو بیوی سمیت پیش کرنیکا حکم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(نامہ نگارخصوصی)لاہور ہائی کورٹ کے مسٹرجسٹس علی ضیاء باجوہ نے معذور شہری سمیت بیوی کی پولیس کی حراست سے بازیابی کیلئے دائردرخواست پر ایس پی سی آئی اے اور ڈی ایس پی سی آئی اے نواں کوٹ کو کل 9ستمبر کو معذور شخص امین الحسنات اور اس کی اہلیہ رضیہ بی بی کو صبح 9 بجے عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا،والیل مصطفی کی جانب سے دائرحبس بے جا کی درخواست پرمیاں داؤد ایڈووکیٹ نے موقف اختیار کیا کہ ان کے موکل کے معذور بھائی امین الحسنات اور اس کی اہلیہ رضیہ امین الحسنات کو سی آئی اے پولیس نواں کوٹ نے 6 ستمبر کو رات کے 2 بجے گھر سے اٹھا لیا،دونوں میاں بیوی کے خلاف کوئی مقدمہ بھی نہیں،معذورامین الحسنات کے برادرنسبتی جمیل اور غلام عباس کے خلاف ہنجروال میں دوہرے قتل کا مقدمہ درج ہے جس میں دو ماہ سے پولیس مفرور ملزم کی گرفتاری کیلئے اس کے رشتہ داروں کے گھروں پر چھاپے مار رہی ہے،عدالت عالیہ نے پہلے بھی پولیس کو معذور شخص اور اس کی فیملی کو ہراساں کرنے سے روکا تھا مگر عدالتی حکم کے باوجود سی آئی اے نواں کوٹ دوبارہ معذور شخص اور اس کی اہلیہ کو اٹھا کر لے گئی ہے، معذور شخص متعدد مرتبہ یقین دہانی کراچکا ہے اس کامفرور ملزمان کیساتھ کوئی تعلق نہیں، پولیس کیساتھ تمام تر تعاون کے باوجود سی آئی اے پولیس نے معذور شخص کو اہلیہ سمیت رات گئے اٹھایا، عدالت سے استدعاہے کہ دونوں کوبازیاب کرانے کاحکم دیاجائے۔
معذور شہری

مزید :

صفحہ آخر -