حق نہیں دیا گیا تو عوام حکمرانوں کے گھروں کا گھیراؤ کریں گے: سراج الحق

    حق نہیں دیا گیا تو عوام حکمرانوں کے گھروں کا گھیراؤ کریں گے: سراج الحق

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


       کراچی(اسٹاف رپورٹر) امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے کہا ہے کہ سندھ حکمرانوں کی غفلت سے ڈوب گیا ہے۔خیرات نہیں بلکہ اپنا حق نہیں دیا گیا تو عوام ان کے گھروں و بنگلوں کا گھیراء کریں گے۔ 20 دن پہلے وزیر اعلیٰ مراد علی شاہ نے ایمرجنسی کا اعلان کیا مگر پورا سندھ دیکھا کہیں بھی ایمرجنسی نام کی کوئی چیز نظر نہیں آرہی ہے۔ ہر طرف روڈوں پر بارش وسیلاب متاثرین بے یارومددگار پڑے ہوئے ہیں۔ کے این شاہ، میھڑ،جھڈو سمیت سندھ کے کئی شہر ڈوب گئے اور مقامی بااثر لوگ اپنے فصلوں کو بچانے کے لیے کہیں کٹ لگاکر تو کہیں پانی کا راستہ روک کر سندھ کے مزید شہروں کو برباد کرنے پر تلے ہوئے ہیں۔ سندھ حکومت ایک ناکام حکومت ہے جب پنجاب میں آٹا سستا ہے تو سندھ میں کیوں مہنگا ہے۔ ظالم حکمرانو  آئی ایم ایف کی غلامی کی بجائے عوام کے لیے اور کچھہ نہیں کرسکتے تو کم از کم مہنگائی کے جن کو بوتل میں بند کرکے لوگوں کے دکھوں پر مرہم اور ہمدردی کرو۔ کمرتوڑ مہنگائی نے عوام کی چیخیں نکال دیں ہیں غریب آدمی کا زندہ رہنا بھی مشکل بنادیا گیا ہے۔یہ وفاقی و صوبائی واحد حکومت ہے جس کے منتظمین متاثرین کے لیے عملی اقدامات کرنے کی بجائے جلسے اور فضائی دورے کر رہے ہیں۔ ہمارے 16 ہزار الخدمت کے رضاکار متاثرین کی مدد کرنے میں مصروف ہیں اور متاثرین کی مکمل تک خدمت کا یہ سلسلہ جاری رہے گا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جھڈو، ٹنڈوجان محمد، ڈگری، گجری اور سانگھڑ میں بارش وسیلاب متاثرہ علاقوں کا دورہ، الخدمت ریلیف سرگرمیوں کے جائزے اور میڈیا سے بات چیت کے دوران کیا۔ سراج الحق نے مطالبہ کیاکہ متاثرین میں امداد کی تقسیم کو شفاف بنانے کے لیے ہر تحصیل کی سطح پر کمیٹیاں بناکر سول سوسائٹی، صحافی،وکلاء،علمائے کرام اور بزرگ شہریوں کا شامل کیاجائے۔ آزمائش کی اس گھڑی میں پوری قوم کو توبہ استغفار کرنا چاہئیے۔ دریں اثناء  سراج الحق نے مقامی رہنماؤں و صحافیوں کے ہمراہ کشتی پر زیرو پوائنٹ جھڈو  دورے کے بعد پریس کانفرس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ پچاس ہزار کی آبادی کا جھڈو شہر بربادی کا منظر پیش کر رہا ہے۔حکومت چاہتی تو شہر بچ سکتا تھا۔ چاروں طرف مکانات پانی میں ڈوبے ہوئے ہیں۔ 80 فیصد آبادی ہجرت کرنے پر مجبور ہوئی۔ گھر پانی میں ڈبوتے ہوئے ہیں جو بچے کچھے ہیں ان میں رہائش پذیر لوگوں کے لیے حکومت پینے کا پانی بھی فراہم کرنے میں ناکام رہی ہے۔انہوں نے زور دیاکہ حکومتی بااثر لوگوں کی زمین بچانے کی بجائے سندھ حکومت انسانوں کو بچانے کے لیے پانے کے قدرتی راستوں کو کھولاجائے۔سراج الحق نے الخدمت کے تحت متاثرین کے لیے قائم کچن اور میڈیکل کیمپ جا دورہ بھی کیا۔ مرکزی نائب امیر ڈاکٹر معراج الہدیٰ صدیقی، سندھ کے امیر محمد حسین محنتی، سیکرٹری اطلاعات مجاہد چنا سمیت دیگر صوبائی،ضلعی و مقامی ذمے داران بھی اس موقع پر انکے ساتھ موجود تھے۔

مزید :

صفحہ اول -