کراچی میں ایک بار پھر دودھ کی قیمت میں من مانا اضافہ کردیا گیا 

      کراچی میں ایک بار پھر دودھ کی قیمت میں من مانا اضافہ کردیا گیا 

  

کراچی(اسٹاف رپورٹر)شہر قائد میں دودھ فروش مافیا نے ایک بار پھر دودھ کی قیمت میں اضافہ کردیا، شہر میں دودھ 180 روپے لیٹر میں فروخت ہونے لگا۔تفصیلات کے مطابق شہری انتظامیہ اپنے روایتی انداز میں چپ سادھے بیٹھی ہے اور دودھ کی قیمت کے حوالے سے اپنے مقرر کردہ نرخ پر عمل درآمد نہیں کرواسکی۔کراچی میں دودھ فروش مافیا بے لگام ہوگئی ہے، ڈیری فارمز نے دودھ ایک بار پھر مہنگا کردیا، دودھ فروشوں نے ایک بار پھر سرکاری نرخ نامے کو ہوا میں اڑاتے ہوئے فی لیٹر دودھ کی قیمت میں مزید دس روپے اضافہ کردیا۔اس اضافے کے بعد ایک لیٹردودھ کے نرخ 180 روپے ہوگئے، چند ماہ پہلے 26 روپے اضافے کے ساتھ دودھ کی سرکاری قیمت 120 روپے مقررکی گئی تھی جس پر کسی نے بھی کان نہیں دھرا۔ڈیری فارمرز دیدہ دلیری کے ساتھ دودھ سرکاری نرخ سے 60 روپے مہنگا فروخت کر رہے ہیں، شہریوں کا کہنا ہے کہ بے لگام دودھ مافیا نے دھڑلے سے دودھ پھر 10 روپے مہنگا کرکے 180 روپے لیٹر تک پہنچادیا ہے۔دوسری جانب ڈیری فارمرز ایسوسی ایشن نے دودھ کی قیمت بڑھانے کی وجہ پیداواری لاگت کو قرار دیا ہے ان کا کہنا ہے کہ حالیہ سیلابی بحران کے بعد نئے بھا کے تحت 320 روپے فی من دودھ کے نرخ بڑھائے گئے ہیں۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -