این بی پی کا صاف پانی فراہم کرنے کیلئے این جی اوز کے ساتھ اشتراک

این بی پی کا صاف پانی فراہم کرنے کیلئے این جی اوز کے ساتھ اشتراک

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


 کراچی (اسٹاف رپورٹر)شدید بارشوں اور سیلاب نے  ملک کے متعدد علاقوں میں بڑے پیمانے پر تباہی مچائی۔ حکام کے اندازے کے مطابق سیلاب سے 33 ملین سے زائد  لوگ متاثرہوئے اور 1000سے زائد افراد جاں بحق ہوے۔پاکستانی قوم، سول سوسائٹی اور انسانی ہمدردی کی بنیاد پر کام کرنے والے اداروں  نے سیلاب سے متاثرہ افراد کی مدد اور بحالی کیلئے آگے قدم بڑھایاہے۔  حکام نے سیلابی پانی میں ڈوبے علاقوں میں پانی سے پیدا ہونے والے بیماریوں ہیضہ، جلدکی بیماریوں، آنکھوں کے انفکشن کی بیماریوں کے پھوٹنے کی اطلاعات دی ہیں۔ نیشنل بینک آف پاکستان نے تھردیپ مائیکروفنانس فانڈیشن اور رورل کمیونٹی ڈویلپمنٹ پروگرام) آر سی ڈی پی (کے ساتھ   ملک بھر میں سیلاب متاثرین کوپینے کے صاف پانی تک رسائی دینے کیلئے پاک وائیٹا کی طرف سے تیار کردہ خالص پانی فراہم کرنے کیلئے اشتراک کیا۔ پاک وائیٹا پیوریفائر کو بیکٹریا، جراثیموں، مائیکرو پلاسٹکس اور گندگی سے پاک کرنے کیلئے آزاد اور آئی ایس او سرٹیفائیڈ لیبارٹریوں کی طرف سے سخت جانچ پڑتال سے گزارا جاتا ہے تاکہ یو ایس انوائرمنٹ پروٹیکشن ایجنسی) ای پی اے (، این ایس ایف انٹرنیشنل اینڈ ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن) ڈبلیو ایچ او(کے متعین پروٹوکول پر پورا اترا جاسکے جو۔ پاک وائٹا پانی اس وقت 82ممالک میں فراہم کیا جاتا ہے۔ صدر و سی ای او رحمت علی حسنی نے وزیر اعظم فلڈ ریلیف فنڈ میں 50ملین روپے کے عطیہ کے ذریعے سیلاب زدگان کی مدد کیلئے اضافی اقدامات کا اعلان کیا۔انہوں نے بتایاکہ این بی پی نے ڈیجٹل ادائیگیوں کیلئے پلیٹ فارم کا بھی اجرا کیا ہے تاکہ دنیا بھر اور پاکستان میں لوگ ادائیگی کے اپنے ترجیحی طریقہ کار مثلا کریڈٹ/ڈیبٹ کارڈ، انٹرنیشنل بینک ٹرانسفر، لوکل بینک ڈائریکٹ ڈیبٹ، والٹس، اے ٹی ایمز اور ون بل کے ذریعے عطیات دے سکتے ہیں۔صدر)اے(این بی پی  نے قوم سے اپیل کی کہ وہ اس مشکل وقت میں سیلاب زدگان کیلئے دل کھول کر عطیات دیں۔