جسم فروش کو رقم کی ادائیگی جرم قرار، پارلیمنٹ نے بل منظور کرلیا

جسم فروش کو رقم کی ادائیگی جرم قرار، پارلیمنٹ نے بل منظور کرلیا
جسم فروش کو رقم کی ادائیگی جرم قرار، پارلیمنٹ نے بل منظور کرلیا

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

پیرس (آن لائن) فرانس میں ارکان پارلیمان نے رقم کے عوض جسم فروشوں سے جنسی تعلق کو غیر قانونی قرار دینے کا قانون منظور کر لیا۔ اس قانون کے تحت جنسی تعلق کے لیے جسم فروش کو قیمت ادا کرنے والے شخص کو تین ہزار 750 یورو تک جرمانہ کیا جا سکے گا۔ قانون کے تحت جنسی تعلق کے لیے رقم کی ادائیگی کرنے والے ملزمان کو کلاسز لینا ہونگی جس میں انھیں طوائفوں کے حالات زندگی کے بارے میں بتایا جائے گا۔فرانس میں اس متنازع قانون کو پاس کرنے میں دو برس لگے کیونکہ پارلیمان کے دونوں ایوانوں میں اس پر اختلافات پائے جاتے تھے۔ اس قانون پر آخری بحث کے دوران متعدد سیکس ورکرز نے پارلیمان کے باہر احتجاج بھی کیا۔فرانسیسی خبر رساں ایجنسی کے مطابق ان جسم فروش خواتین نے کتبے اٹھا رہے تھے جن پر درج تھا کہ ’ہمیں آزاد نہ کرو کیونکہ ہم اپنا خیال رکھ سکتی ہیں۔ فرانس میں جسم فروشوں کی یونین کے ارکان کے مطابق اس قانون سے طوائفوں کا ذریعہ معاش متاثر ہو گا اور ایک اندازے کے مطابق اس وقت ملک میں 30 سے 40 ہزار کے قریب طوائفیں ہیں۔تاہم اس قانون کے حامیوں کا کہنا ہے کہ قانون سازی سے ملک میں انسانی سمگلنگ کے نیٹ ورک کے خلاف مدد ملے گی۔