قومی سلامتی کے تحفظ کا عزم، جرائم اور پولیس!

قومی سلامتی کے تحفظ کا عزم، جرائم اور پولیس!

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

کور کمانڈرز کے ماہانہ اجلاس میں دہشت گردی اور پاکستان کی سلامتی کے خلاف کارروائیوں کا تفصیل سے جائزہ لیا گیا اور اجلاس میں پھراس عزم کا اظہار کیا گیا کہ مُلک کی ترقی اور سلامتی کے خلاف ہر قسم کی غیر ملکی کارروائی اور مداخلت کو روکا جائے گا، اجلاس میں شوال اور مُلک کے دوسرے حصوں میں جاری آپریشنز کا بھی جائزہ لیا گیا اور پاکستان کی مسلح افواج کی کارروائیوں پر اطمینان کا اظہار کیا گیا ہے۔
کور کمانڈر اجلاس کے بارے میں آئی ایس پی آر کے بیان میں جو اظہار کیا گیا وہ قوم کے دِل کی آواز ہے اور قوم افواج پاکستان کی کامیابی کے لئے دُعا گو ہے۔ گلشن اقبال پارک لاہور کے سانحہ کے بعد فوج نے رینجرز اور پولیس کے ساتھ مل کر پنجاب میں جو آپریشن شروع کیا اس کے نتائج بھی حوصلہ افزا ہیں یہ کارروائیاں اب انٹیلی جنس اداروں کی معلومات کے بعد کی جا رہی ہیں۔کئی مجرم مارے گئے، بہت سارے گرفتار ہوئے اور سہولت کار بھی پکڑے گئے ہیں توقع ہے کہ ان کارروائیوں کے بہتر نتائج نکلیں گے۔
فوج جو خدمات سرانجام دے رہی ہے وہ سب پر عیاں ہے تاہم مُلک کے اندر شہروں میں جو جرائم ہو رہے ہیں ان کی بیخ کنی انتظامیہ اور پولیس کی ذمہ داری ہے۔ پنجاب حکومت نے ڈولفن فورس کی تشکیل سمیت کئی اقدامات کئے ہیں تاہم اصل شعبہ یا محکمہ پولیس تاحال پوری طرح متحرک اور باعمل نہیں، حالانکہ پولیس مستعد ہو جائے۔ ارادہ کر لے تو جرائم کی شرح بہت گر سکتی ہے۔ پولیس بہتر کارکردگی دکھائے تو عوام کو بھی حوصلہ ہو سکتا ہے۔ یہاں بھتہ خوری، راہزنی، ڈاکے اور سٹریٹ کرائمز کے خلاف بھی فوجی آپریشن جیسی مہم کی ضرورت ہے۔ حکومت کو توجہ دینا چاہئے۔

مزید :

اداریہ -