پنجاب میں اضافی گندم سے معیشت پر منفی اثرات مرتب ہونگے، بلال صوفی

پنجاب میں اضافی گندم سے معیشت پر منفی اثرات مرتب ہونگے، بلال صوفی

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app


لاہور(کامرس رپورٹر)وفاقی چیمبر کی فلور ملنگ انڈسٹری کمیٹی کے چیئرمین ڈاکٹر بلال صوفی نے ملک میں اضافی گندم کے بحران پر تشویش کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ناقص پالیسیوں کے نتیجے میں پورے ملک میں پچاس لاکھ ٹن اضافی گندم تیسرے سال میں داخل ہو گئی ہے، جبکہ پنجاب اضافی گندم کے بحران میں سر فہرست ہے جہاں گزشتہ برس کیری فاروڈ سٹاک21 لاکھ ٹن تھا جو رواں برس23 لاکھ سے بڑھ چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس قدر بڑی مقدار میں اضافی گندم کے پنجاب کی معیشت پر منفی اثرات مرتب ہو رہے ہیں اور اب تک صوبے کواس کی دیکھ بھال پر33ارب روپے کا نقصان ہو چکا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اضافی گندم کی نکاسی کیلئے مناسب پالیسیاں تشکیل نہیں دی گئیں جبکہ ناقص منصوبہ بندی کی وجہ سے ایکسپورٹ پالیسی کا بھی غلط استعمال ہوا۔ ڈاکٹر بلال صوفی نے کہا کہ حکومت فوری طور پر اضافی گندم کی نکاسی کا بندوبست کرے۔

مزید :

صفحہ آخر -