جنگ اور عدم استحکام پاکستان کو فائدہ دے گا اور نہ ہی ہمارے مفاد میں ہے ، افغان سفیر

جنگ اور عدم استحکام پاکستان کو فائدہ دے گا اور نہ ہی ہمارے مفاد میں ہے ، ...

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

 اسلام آباد(آن لائن) پاکستان میں تعینات افغان سفیرعمرزخی وال نے کہا ہے کہ پاکستان افغانستان کے ساتھ اچھے تعلقات کے لیے بھرپورکردارادا کررہا ہے، دونوں ممالک جنگ یا امن کی حالت میں نہیں ہیں، پاکستان اور افغانستان کے درمیان بد اعتمادی کی لہر پروان چڑھ رہی ہے جو ٹھیک کرنے کی ضرورت ہے، دونوں ممالک کی کوششوں کے باوجود بھی ہم بہت سی رکاوٹوں کو دور نہیں کرسکے ، جنگ اورعدم استحکام نہ ہی پاکستان کو فائدہ دے گا اورنہ ہی افغانستان کے مفاد میں ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعہ کے روزاسلام آباد میں افغانستان سے متعلق تقریب سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔افغانی سفیرنے پاک افغان مذاکرات کے نتائج کو مثبت قرار دیتے ہوئے کہا کہ یہ ان لوگوں کے لیے مثال ہے جو امن کو ترک کر کے جنگ کو اپنانے کی کوشش کرتے ہیں۔انکا کہنا تھا کہ پاکستان افغانستان کے ساتھ اچھے تعلقات کے لیے بھر پورکردارادا کررہا ہے، دونوں ممالک کے درمیان امن کسی خاص مقصد کے لیے نہیں بلکہ طویل مدتی ہونا چاہیے۔ لیکن پاک افغان ممالک کے درمیان بد اعتمادی کی لہر پروان چڑھ رہی ہے جو ٹھیک کرنے کی ضرورت ہے جبکہ دونوں ممالک کی کوششوں کے باوجود بھی ہم بہت سی رکاوٹوں کو دور نہیں کرسکے ہیں۔افغانی سفیر نے کہا کہ جنگ اورعدم استحکام نہ ہی پاکستان کو فائدہ دے گا اورنہ ہی افغانستان کے مفاد میں ہے، امن کسی ایک خاص مقصد کے لیے نہیں بلکہ ایک طویل اور دونوں مملک کے فائدے کے لیے ہونا چاہیے۔امن کے حوالے سے ان کا مزید کہنا تھا کہ پاکستان سمیت افغانستان کی جانب سے اسے وسیع تناظرمیں دیکھا جارہا ہے جس کی بنیاد ہمدردی، مفاد یا کوئی تحفہ نہیں بلکہ دونوں ممالک کے قومی مفاد کے لیے ہے جو بہت اہمیت کا حامل ہے، جسے مزید آگے بڑھانا بھی چاہیے۔