بار و بنچ میں مثالی تعاون سے13ہزار مقدمات نمٹائے،جسٹس محمد قاسم

بار و بنچ میں مثالی تعاون سے13ہزار مقدمات نمٹائے،جسٹس محمد قاسم

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ملتان (نمائندہ خصوصی) ہائیکورٹ ملتان بنچ کے سینئر جج مسٹر جسٹس محمد قاسم خان نے کہا ہے کہ گزشتہ برسوں کی نسبت نئے مقدمات دائر ہونے کی تعداد میں بہت اضافہ ہوگیا ہے لیکن مقدمات کے تیزی سے فیصلوں اورزیر التواء مقدمات کی تعدادمیں ساڑھے 4 ہزار کمی کی وجہ سے سائلوں کا اس ادارے پر اعتماد میں اضافہ ہورہاہے اور بارو بنچ کے مثالی تعاون کے باعث مختصر مدت میں13 ہزار سے زائدمقدمات کا فیصلہ (بقیہ نمبر6صفحہ12پر )
کیاگیا ہے ان خیالات کا اظہارانھوں نے گزشتہ روز ہائیکورٹ بار ایسوسی ایشن ملتان کی جانب سے منعقدہ تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ہے انھوں نے مزید کہا کہ وکلاء کے تعاون کیبغیر اتنی بڑی تعداد میں مقدمات کا فیصلہ کرنا ممکن نہیں تھا اور وکلاء نے اپنے مفادات کو پس پشت ڈال کر لوگوں کو انصاف کی فراہمی کے لئے بھرپور تعاون کیا ہے انھوں نے کہا کہ وکلاء کے مسائل کے حل کیلئے درواز ے ہر وقت کھلے ہیں اور مسائل متعلقہ اتھارٹی تک بھی پہنچائیں گے قبل ازیں خطاب کرتے ہوئے صدر بار شیخ جمشید حیات نے کہا کہ ملتان بنچ کے ججز نے نہایت محنت ،جانفشانی اور بہادری سے انصاف کی فراہمی کے لئے اپنا کردار ادا کیا ہے اور جوڈیشل کمیشن کا اجلاس ہونے جارہا ہے دعا ہے کہ یہاں سے تعینات ہونے والے ججز مستقل ہوجائیں تقریب میں ملتان بنچ کیمسٹر جسٹس سید محمد کاظم رضا شمسی،مسٹر جسٹس محمود مقبول باجوہ،مسٹر جسٹس علی باقر نجفی،مسٹر جسٹس حافظ شاہد ندیم کاہلوں،مسٹر جسٹس شاہد مبین،مسٹر جسٹس مشتاق احمد تارڑ،مسٹر جسٹس اسلم جاوید منہاس اورمسٹرجسٹس شہرام سرور چوہدری سمیت وکلاء کی کثیر تعدادنے شرکت کی ہے جبکہ نظامت کے فرائض جنرل سیکرٹری چوہدری عمر حیات نیانجام دئیے ہیں ۔