اسلام میں ریاست کا سربراہ کاروبار نہیں کرسکتا: مفتیان کرام

اسلام میں ریاست کا سربراہ کاروبار نہیں کرسکتا: مفتیان کرام
اسلام میں ریاست کا سربراہ کاروبار نہیں کرسکتا: مفتیان کرام

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

لاہور(ویب ڈیسک) مفتیان کرام نے کہا ہے کہ اسلام میں ریاست کا سربراہ کاروبار نہیں کر سکتا، تاہم دوسری ریاست میں اپنے یا اہل خانہ کے کاروبار کی صورت میں اس کا فرض ہے کہ وہ ریاست اور رعایا کو آگاہ کرے۔ اخبار جہان پاکستان کے مطابق مفتی حسیب قادری ، مفتی محمد عمران اور مفتی ڈاکٹر کریم خان نے کہا کہ اسلام میں ریاست کے سربراہ کا خرچہ ریاست ہی اداکرتی ہے ، کاروبار کی صورت میں خرابیاں پیداہونے کا خدشہ ہے ۔ اسی طرح اگر کوئی سربراہ دوسری ریاست میں کاروبار کرتا ہے یا اس کی اولاد کرتی ہے تو اس میں بظاہر شرعی طورپر کوئی ممانعت نہیں تاہم سربراہ کیلئے لازم ہے کہ وہ تمام ترکاروباری معاملات اپنی ریاست اور رعایا کے سامنے رکھے تاکہ کوئی خرابی چھپے نہ بدگمانی پید ا ہو۔

مزید :

لاہور -