دنیا کی دو بڑی معیشتوں کے درمیان بڑھتی کشیدگی نئی بلندی پر پہنچ گئی

دنیا کی دو بڑی معیشتوں کے درمیان بڑھتی کشیدگی نئی بلندی پر پہنچ گئی

بیجنگ (آئی این پی/شِنہوا)امریکہ کی طرف سے مسلسل بھڑکائی جانے والی تجارتی کشیدگی کے پیش نظر چین کے پاس ضرورت پڑنے پر جوابی فائر کرنے اور اپنے مفادات کے تحفظ کیلئے کافی تجارتی ہتھیار موجود ہیں۔ یہ بات حکام اور ماہرین اقتصادیات نے بتائی ہے، امریکہ کی طرف سے گزشتہ جمعرات کو چینی مصنوعات کی درآمدات پر 100بلین امریکی ڈالر کے مزید ٹیکس عائد کرنے کی دھمکی کے بعد دنیا کی دونوں سب سے بڑی معیشتوں کے درمیان کشیدگی نئی بلندی پر پہنچ گئی ہے، چین نے کچھ ہی گھنٹے بعد کہا کہ وہ ہر قیمت پر آخر تک جنگ کریگا اور جامع جوابی اقدامات کریگا، یہ دونوں بڑی اقتصادی قوتوں کے درمیان تجارتی گولہ باری کا تیسرا راؤنڈ ہے جس کا آغاز امریکہ کی طرف سے کیا گیا ہے۔ چینی سوسائٹی برائے عالمی تجارتی آرگنائزیشن سٹیڈیزی کی ایگزیٹو کونسل کے رکن ہی وی وین نے کہا کہ چین کی آستین میں ابھی بھی کئی کارڈ موجود ہیں، انہوں نے کہا کہ اگر تجارتی کیشدگی بڑتی گئی تو پیٹرولیم اور مائع قدرتی گیس آئندہ محصولات کیلئے ممکنہ آپشن ہو سکتے ہیں۔

مزید : کامرس