بجٹ عمل کو بہتر بنانے کیلئے پانچ سالہ منصوبہ بنایا جائے‘خواجہ حبیب الرحمان

بجٹ عمل کو بہتر بنانے کیلئے پانچ سالہ منصوبہ بنایا جائے‘خواجہ حبیب الرحمان

اسلام آ باد(این این آئی ) ایران پاک فیڈریشن آف کلچراینڈ ٹریڈ کے صدر خواجہ حبیب الرحمان نے کہا ہے کہ بجٹ کے عمل کو بہتر بنانے کیلئے پانچ سالہ منصوبہ ہوناچاہیے تاکہ سرمایہ کاروں کو ملکی پالیسیوں سے آگاہی ہو، جب تک سالانہ بجٹ میں سسپنس رہے گا صورتحال بہتر نہیں ہو سکتی، دنیا بھر میں ایز آف ڈوئنگ بزنس میں پاکستان درجہ بندی میں بہت پیچھے ہے ، درجہ بندی کو بہتر بنانے تک بیرونی سرمایہ کار نہیں آئیں گے، ہمیں اپنی انوسٹمنٹ پلاننگ کو بہتر بنانے کی ضرورت ہے، سی پیک کے تحت اقتصادی زون بڑا قدم ہے ہمیں اپنی استعداد کار کو بڑھانا ہوگا۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ملاقات کیلئے آئے صنعتکاروں کے وفد سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے اپنے نظم وضبط کو خراب کر دیا ہے، اخراجات پوری رفتار سے جاری ہیں جبکہ آمدنی نہ ہونے کے برابر ہے، موجودہ حکومت کو آئندہ مالی سال کا بجٹ پیش نہیں کرنا چاہیے، اگر حکومت ڈیڑھ ماہ قبل بجٹ دے گی تو بجٹ کے لوازمات پورے نہیں کر پائے گی، اکنامک سروے گر ؤتھ ریٹ سمیت دس ماہ کے اعدادوشمار دستیاب نہیں ہوں گے، تجارتی سرگرمیوں کے فروغ کیلئے بین الوزارتی کوآرڈی نیشن بڑھانی چاہیے جبکہ اداروں کو مضبوط اور سمگلنگ کے خاتمے کیلئے اقدمات کیے جائیں۔انہوں نے مزید کہا کہ ترقیاتی بجٹ کا پیمانہ عوام اور ملک کا فائدہ ہونا چاہیے، ہمیں اپنی برآمدات بڑھانی ہیں اور آج سے 40 سال آگے کی منصوبہ بندی کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہا کہ معیشت ٹھیک نہیں چل رہی تو ٹیکس ہدف بڑھانا زیادتی ہے جس کا اثر کاروباری برادری پر پڑتا ہے،ایڈوانس ٹیکس کے لیے ہمیں سا بق سسٹم کی طرف جانا چاہیے، لوگ نان فائلر ہونے کو ترجیح دیتے ہیں، فائلر پر اضافی ودہولڈنگ ٹیکس نہیں ہونا چاہیے ، مسائل کے حل کیلئے پیداواری لاگت کو کم کرنے کی ضرورت ہے۔

مزید : کامرس

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...