افراط زر کی شرح میں 0.64فیصد کا اضافہ

افراط زر کی شرح میں 0.64فیصد کا اضافہ

ملتان (خصوصی رپورٹر) حساس قیمتوں کے اشاریے (ایس پی آئی) کی بنیاد پر مبنی افراط زر کی شرح میں گزشتہ ہفتے 0.64 فیصد کا(بقیہ نمبر29صفحہ12پر )

اضافہ ہوا جس میں سے بڑا کردار بالترتیب تازہ دودھ، بیف، مٹن، چکن، ٹماٹر، دہی کا رہا۔رواں ہفتے تازہ دودھ کے نرخ 82.50 روپے سے بڑھ کر اوسطاً 83.77 روپے فی لیٹر ہوگئے جو ہفتہ وار بنیادوں پر 1.54 فیصد اور سال بہ سال 3.18فیصد زیادہ ہیں، اوسط درجے کا ہڈی والا گوشت ایک ہفتے میں 1.68 فیصد مہنگا ہو کر 358.28 روپے فی کلوگرام ہوگیا جبکہ بکرے کا گوشت 1.57 روپے کے اضافے سے اوسطاً 759 روپے فی کلوگرام ہوگیا۔زندہ مرغی 159.45 روپے سے بڑھ کر 164.21روپے فی کلو، ٹماٹر 4.70 فیصد کے اضافے سے 37 روپے فی کلوگرام جبکہ دہی 1.84 فیصد بڑھ کراوسطاً 100.94 روپے فی کلوگرام ہوگیا، ہوٹل میں پکی ہوئی دال کی قیمت 2روپے فی پلیٹ، کیلے2روپے فی درجن،آلو و پیاز 1 روپے، سرخ مرچ 3روپے، خوردنی گھی کی قیمت میں 2 روپے دال مونگ، چینی بجلی کے بلب کی قیمت میں معمولی اضافہ ہوا ہے۔بیوروشماریات کے مطابق گزشتہ ہفتے سب سے زیادہ بوجھ 12ہزار سے 18ہزار روپے ماہانہ کمانے والوں پر 0.69 فیصد پڑا، 35ہزار ماہانہ کمانے والوں پر0.67فیصد، 8سے12ہزار کمانے والوں پر مہنگائی میں0.65فیصد جبکہ 8ہزار روپے تک اور ماہانہ 35 ہزار روپے سے زیادہ کمانے والوں کے لیے افراط زر کی شرح میں 0.60 فیصد کا اضافہ ہوا۔

مزید : ملتان صفحہ آخر