چونیاں،اوباش نوجوانوں کی گونگی بہری لڑکی سیبد اخلاقی

چونیاں،اوباش نوجوانوں کی گونگی بہری لڑکی سیبد اخلاقی

چونیاں( نامہ نگار) ظلم کی انتہا گونگی بہری والدین کی اکلوتی بیٹی سے اوباش نوجوانوں کی بد اخلاقی ملزم گرفتار نہ ہوسکے چار روز بعد پولیس نے مقدمہ درج کیا ۔تفصیلات کے مطابق نواحی علاقہ شمس آباد کے غریب محنت کش غلام رسول کی گونگی بہری 16 سالہ اکلوتی بیٹی رابعہ سے 3 افراد کی بد اخلاقی پولیس تھانہ صدر چونیاں کی سستی ہمیشہ کی طرح برقرار ملزمان گرفتار نہ ہوسکے والدین اور عزیز واقارب غم سے نڈھال وزیراعلیٰ پنجاب سے انصاف کا مطالبہ کردیاغلام رسول اور اس کی بیوی جو کے محنت مزدوری کی غرض سے گھرسے باہر گئے ہوئے تھے ان کی 16 سالہ گونگی بہری بیٹی گھر میں اکیلی تھی رابعہ نے اسپیشل ایجوکیشن کی تعلیم بھی حاصل کررہی ہے ۔ والدین کا کہنا ہے کہ ان کی بیٹی تندور پر روٹی لینے گئی جہاں سے اسے 3 افراد گاڑی میں اغوا کرکے لے گئے اور بد اخلاقی کرتے رہے جبکہ غریب والدین اپنی بیٹی کو گھر گھر تلاش کرتے رہے اور رات کو یتیم خانہ لاہور سے پولیس کی کال آئی کہ ان کی بیٹی ان کے پاس ہے جو بیہوشی کی حالت میں ملی ہوش آنے پر والد کا نمبر لکھ کر دیا ۔ والدین کا کہنا ہے کہ تھانہ صدر چونیاں پولیس نے اپنی مرضی کی دفعات لگا کر ایف آئی آر درج کرلی ہے مگر 2 دن گزرنے کے باوجود ملزمان کو گرفتار نہیں کرسکی ملزمان بااثر ہونے کی وجہ سے پولیس ہاتھ نہیں ڈال رہی غم کی تصویر بنے غریب لاچار والدین نے وزیراعلیٰ پنجاب اور اعلیٰ حکام سے انصاف کا مطالبہ کردیا ہے کہ گونگی بہری بچی سے زیادتی کرنے والوں کو نشانِ عبرت بنایا جائے۔

متاثرہ بچی کے والدین نے میڈیا کو بتایا کہ پولیس تھانہ صدر کو جب صورت حال سے آگاہ کیا گیا تو وہ چارد ن تک ٹال مٹول سے کام لیتی رہی بلآخر اپنی مرضی کی تحریر کیمطابق اغوا کا مقدمہ بجرم365/Bکا مقدمہ درج کیا ۔

بد اخلاقی

مزید : علاقائی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...