وقت آ گیا ہے ملک سے منفی سیاست کا مکمل خاتمہ کیاجائے، ساجد میر

وقت آ گیا ہے ملک سے منفی سیاست کا مکمل خاتمہ کیاجائے، ساجد میر

لاہور ( خصوصی رپورٹ) امیر مرکزی جمعیت اہل حدیث سینیٹر پروفیسر ساجد میر نے کہا ہے کہ جب تک ایک دوسرے کوفتح کرنے میں مصروف ہونگے ملک ترقی نہیں کرسکے گا۔ ملک میں بعض فیصلے عجلت میں کیے جارہے ہیں اور ہم جانتے ہیں کہ ان فیصلوں پر کس کا دباؤ ہے۔ اب وقت آ گیا ہے کہ ملک سے منفی سیاست کا مکمل ختم کیاجائے۔ پرامن، مضبوط اور خوشحال پاکستان کا حصول ہماری منزل ہونی چاہیے۔اپوزیشن نے گزشتہ چار سال کے دوران ملک میں افراتفری اور انتشار پھیلانے کے سوا کچھ نہیں کیا۔ ایک فضاء بنائی جارہی ہے کہ جمہوریت سے آمریت بہتر ہے۔ ملک میں سیاسی بحران پیدا کر کے پاکستان کو عدم استحکام کی طرف لے جایا جا رہا ہے۔اس امر کااظہار انہوں نے مرکز اہل حدیث راوی روڈ پر اجلاس سے خطاب اور بعدزاں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا۔انہوں نے مزیدکہا کہ آج ہر جگہ کرپشن اور ایک دوسرے کو چور چور کہنے کی روش چل پڑی ہے۔ یہ کہاں کا سیاسی کلچر ہے؟ ہم انتہا پسندی کے خلاف ہیں لیکن نوجوان نسل کو انتہاپسند ی کی طرف دھکیلا جا رہا ہے۔ڈاکٹر حافظ عبدالکریم نے امام کعبہ کے دور ہ پاکستان اور آل پاکستان اہل حدیث کانفرنس کی رپورٹ پیش کی۔ اجلاس میں مرکزی قیادت پر بھرپور اعتماد کا اظہار کیا گیا اور آل پاکستان اہل حدیث کانفرنس میں امام کعبہ کی شرکت اور اس کی تاریخی کامیابی پر پروفیسر ساجد میر اور حافظ عبدالکریم کو مبارک باد پیش کی گئی۔اجلاس میں مفتی عبیداللہ عفیف، مولانا عبدالرشید حجازی، قاری عبدالحفیظ، میاں محمود عباس، مولانا نعیم بٹ، حافظ ابتسام الہی ظہیر، ڈاکٹر ریاض الرحمن یزدانی، معتصم الہی ظہیر، ڈاکٹر حماد لکھوی، قاری صہیب میر محمدی، حافظ یونس آزاد، علامہ محمدشفیق خاں پسروری، انعام الرحمن یزادنی، مولانا یسین ظفر،ڈاکٹر عبدالغفور راشد،قاری عتیق الرحمن شاہ، قاری عبدالرحیم گجر، نجیب احمد، عبدالرحمن ثاقب،پروفیسر عبدالرحمن لدھیانوی،حافظ عبدالحمیدجہلمی، مولانا عمران عریف،مولانا عبدالباسط شیخوپوری،رانا خلیق پسروری، حاجی نذیر انصاری ودیگر علما نے شرکت کی۔

مزید : صفحہ آخر