پاکستان روس سے ایس یو 35لڑاکا طیاروں سمیت جدید دفاعی آلات خریدے گا: وزیر دفاع

پاکستان روس سے ایس یو 35لڑاکا طیاروں سمیت جدید دفاعی آلات خریدے گا: وزیر دفاع

ماسکو( مانیٹرنگ ڈیسک) وزیرِ دفاع خرم دستگیر کا کہنا ہے کہ پاکستان روسی ہتھیاروں کی ٹیکنالوجی میں دلچسپی رکھتا ہے اور اس سے ایس یو 35 لڑاکا طیاروں سمیت جدید ترین دفاعی و فوجی آلات خریدے گا۔انگریزی پریس کے مطابق ماسکو میں روسی میڈیا سے بات کرتے ہوئے پاکستانی وزیرِدفاع خرم دستگیر کا کہنا تھا کہ 2014 میں دفاعی شعبے کے حوالے سے پاکستان اور روس کے مابین دفاعی معاہدے پر دستخط کیے گئے، دونوں مما لک نے مشترکہ فوجی مشقیں کیں اور روس سے ایم آئی 35 ہیلی کاپٹر بھی خریدے، پاکستان اب بھی جدید ٹیکنالوجی کے حامل روسی ہتھیاروں کی وسیع رینج میں دلچسپی رکھتا ہے۔وزیردفاع نے کہا کہ پاکستان اور روس کے مابین ایس یو 35 لڑاکا طیاروں کی خریداری کے لئے مذاکرات ابھی ابتدائی مرحلے میں ہیں، فوجی مشقوں، جدید آلات اور خفیہ معلومات کے تبادلے سمیت وسیع تر دفاعی تعاون کے لئے پرامید ہیں، پاکستان طویل مدتی معاہدے کے تحت ٹی 90 ٹینک، لڑاکا جیٹ طیارے اور دفاعی نظام کی خریداری میں دلچپسی رکھتا ہے، اس حوالے سے روس سے بات چیت جاری ہے۔خرم دستگیر کا کہنا تھا کہ پاکستان اور روس خطے بالخصوص افغانستان میں امن و امان کے قیام اور مستحکم افغانستان کے لئے کوشاں ہیں، پاکستان افغانستان میں استحکام کیلئے روس کے اقدامات کا معترف ہے اور دیگر عالمی طاقتوں کو بھی دعوت دیتا ہے کہ وہ روس کی طرح دہشت گردی کے خاتمے کے لئے اپنی حکمت عملی وضع کریں۔

مزید : صفحہ آخر