مقبوضہ کشمیر کو غاصب بھارت سے آزادی دلوانا پاکستان کا فرض ہے: حافظ سعید

مقبوضہ کشمیر کو غاصب بھارت سے آزادی دلوانا پاکستان کا فرض ہے: حافظ سعید

لاہور (آئی این پی)جماعۃ الدعوۃ کے سربراہ حافظ محمد سعید نے کہا ہے کہ کلمہ کی بنیاد پر مقبوضہ کشمیر کو غاصب بھارت سے آزادی دلوانا پاکستان کا فرض ہے۔امت مسلمہ کشمیر،فلسطین و دیگر خطوں میں مسلمانوں پر ہونے والے مظالم کا کرب محسوس کرے۔جماعۃ الدعوۃ کے خلاف اقوام متحدہ کی قراردادوں پر فوری عمل ہو گیا لیکن کشمیر و فلسطین پر اقوام متحدہ کی قراردادیں ردی کی ٹوکری میں ڈال دی گئیں۔سیرت النبی ؐکا پیغام ہے کہ مسلمان ایک جسم کی مانند ہیں اور مظلوموں کی مدد کرنا فرض ہے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے ٹاؤن شپ میں سالانہ سیرت النبی ؐکانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پرتمام مکاتب فکر اور شعبہ ہائے زندگی سے تعلق رکھنے والے افراد کی بڑی تعداد موجود تھی۔ کانفرنس سے مرکزی رہنماحافظ عبد الرحمن مکی، مرکزی جمعیت اہل حدیث کے رہنمامولانا منظور احمد،مولانا ضیاء اللہ شاہ بخاری، ابو الہاشم ربانی، حافظ عبدالماجد سلفی ، مولانا ادریس فاروقی،حافظ اسماعیل سلفی، قاری بلال عابد اور دیگر نے بھی خطاب کیا۔ جماعۃالدعوۃ کی طرف سے سکیورٹی کے سخت انتظامات کئے گئے تھے۔ حافظ محمد سعید نے مزید کہاکہ امام مسجد کی طرح مسلمان حکمران بھی انبیاء کے وارث ہیں۔ ساری دنیا کے مظلوم مسلمان پاکستان سے کلمہ لاالہ الا اللہ کا رشتہ پورا کرنے کا حق مانگ رہے ہیں۔جب جماعۃ الدعوۃ اس بارے میں با ت کرتی ہے تو کہا جاتا ہے کہ ان پر پابندیاں لگائی جائیں۔ ان کے رفاہی و فلاحی کاموں کو روکا جائے۔پروفیسر حافظ عبدالرحمن مکی نے کہاکہ مدد کے لیے پکارنے والے مظلوم مسلمانوں کی مدد بالکل اسی طرح کرنی چاہیے جیسے نبی اور صحابہ کی سیرت درس دیتی ہے۔ ہر مسلمان اس بات کا پابندہے کہ اپنے مظلوم مسلمان بھائی کی پکار پر لبیک کہے۔ ہمارے حکمرنوں کو اس فارن پالیسی اور ڈپلومیسی سے واقف ہونا چاہیے جو سیرت رسول سکھاتی ہے۔مولانا منظور احمد،مولانا ضیاء اللہ شاہ بخاری، ابو الہاشم ربانی، حافظ عبدالماجد سلفی ، مولانا ادریس فاروقی،حافظ اسماعیل سلفی، قاری بلال عابد اور دیگر نے کہا کہ سیرت النبی ﷺ اپنی معنویت اور عمل درآمد کے لحاظ سے ایک مکمل ضابطہ حیات ہے۔ سیرت کا ہی تقاضہ ہے کہ علماء کرام اْمت کی رہنمائی کریں اوراپنی ذمہ داری سمجھتے ہوئے قوم میں اتحاد و یکجہتی کا ماحول پیدا کریں۔

مزید : صفحہ آخر