مسلم ممالک میں قتل عام پر عالمی اداروں کی خاموشی افسوسناک ہے، عبدالغفارروپڑی

مسلم ممالک میں قتل عام پر عالمی اداروں کی خاموشی افسوسناک ہے، عبدالغفارروپڑی

لاہور( نمائندہ پاکستان)جماعت اہلحدیث پاکستان کے امیر حافظ عبدالغفارروپڑی اور پنجاب کے امیر حافظ عبدالوحید شاہد روپڑی ودیگر نے کہا ہے کہ کشمیر افغانستان فلسطین سمیت دیگر ممالک میں انسانیت کے قتل عام پر یواین او ،سلامتی کونسل ،انسانی حقوق کی نام نہاد تنظیموں ودیگر عالمی اداروں کی خاموشی انتہائی مجرمانہ فعل ہے۔ بھارت اپنے تمام تر مظالم کے باوجود کشمیریوں کے جذبہ آزادی کو ہرگز دبا نہیں سکتا ۔ایک لاکھ شہداءِ کشمیر کے خون سے مقبوضہ کشمیر میں آزادی کا سورج جلد طلوع ہوگا، ملک میں سیکولر و لبرل ازم کے خواب دیکھنے والوں کا راستہ روک کر نظام مصطفیؐ کے نفاذ کی جدوجہد کرنا ہوگی ، پاکستان کو اس کے نظریاتی تشخص سے محروم کرنے والے ملک و قوم کے خیر خواہ نہیں ،بھارت کشمیر کا مسئلہ طاقت سے نہیں اقوام متحدہ کی قراردادوں سے حل کرئے ،طاقت کا مظاہرہ بھارت کو بہت مہنگا پڑے گا ،بھارت ہٹ دھرمی کی بجائے کشمیر کے مسئلے کو حل کرنے کیلئے برابری کی سطح ڈائیلاگ کا راستہ اپنائے۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے گذشتہ روز لاہور مرکزی دفتر میں مشاورتی اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر حافظ عبدالوھاب روپڑی،مولانا شکیل الرحمن ناصر سمیت دیگر بھی موجود تھے ۔ انہوں نے کہا کہ اتنے بڑے سانحہ پر انسانی حقوق کی تنظیموں،عالمی اداروں اور میڈیا کی مجرمانہ خاموشی انتہائی افسوس ناک ہے ، حوثی باغیوں کے خلاف ایرانی میزائل بہت سارے سوالات پیدا کر رہے ہیں عالمی استعماری قوتوں کو مسلم ممالک میں امن اور ترقی برداشت نہیں۔اس لئے شام اور یمن میں بیرونی مداخلت کی جاری ہے۔ انہوں نے کہا کہ حوثی باغی ہیں تو بیرونی اشاروں پر ارض حرمین شریفین پر گولہ باری کررہے ہیں۔ انہیں خبردار کرتے ہیں کہ دنیا بھر کے مسلمان حرمین شریفین کے تقدس پر اپنی جان قربان کرنے کو بھی تیار ہیں۔ مسلم حکمران دشمنوں کے آلہ کارنہ بنیں۔ انہوں نے کہا کہ اس افسوس ناک سانحہ کی عالمی سطح پر تحقیقات کراتے ہوئے ذمہ داران کو انصاف کے کٹہرے میں لایا جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...