آندھی و طوفان ، آسمانی بجلی گرنے سے 2افراد جاں بحق ، 12زخمی

آندھی و طوفان ، آسمانی بجلی گرنے سے 2افراد جاں بحق ، 12زخمی

لاہور،نوشہرہ ،ڈی جی خان (خبر نگار ،نیوزایجنسیاں) لاہور سمیت صوبہ بھرمیں آندھی ،طوفان اور آسمانی بجلی گرنے سے ایک لڑکی سمیت 2افراد جاں بحق 12سے زائد زخمی ہوگئے ۔تفصیلات کے مطابق ٹھوکر نیاز بیگ کے علاقہ میں آندھی اور طوفان کے باعث گوپے رائے پنڈ میں اقبال نامی محنت کش کے بوسیدہ گھر کی چھت گر ئی جس کے باعث 45 سالہ محمد اقبال اور اس کا 40 سالہ بھائی امجد علی ملبے تلے آ کر شدید زخمی ہو گئے۔ زخمی ہونے والے دونوں افراد کو جناح ہسپتال میں داخل کروا دیا گیا ۔گوجرانوالہ اور شیخوپورہ میں دو افراد آندھی کی ضد میں آکر جاں بحق ہوگئے ۔دوسری طرف نوشہرہ کینٹ میں پریس کلب کے قریب آسمانی بجلی گرنے سے ایک راہ گیر شدید زخمی ہوگیا۔ریسکیو 1122کے مطابق نوشہرہ کینٹ کا 28سالہ رہائشی نماز کی ادائیگی کیلئے مسجد جارہا تھا کہ شدید بارش کے بعد اچانک آسمانی بجلی گرگی جس کی زد میں آکر میر عالم شدید جھلس گیاجس کو ریسکیو 1122نے فوری طور پر آبتدائی طبعی امداد کے بعد ڈسٹرکٹ ہیڈکواٹرہسپتال نوشہرہ منتقل کردیا۔نوشہرہ کے علاقے کیمپ کورونہ میں دریائے کابل میں ڈوبنے والے شخص کی تلاش کرنے کے لیے آپریشن کیا. اس دوران 2 دن کی انتھک اور لگن سے کام کرنے کے بعد ریسکیو1122 کی غوطہ خوروں کو بلا آخر کامیابی ملی اور اس کی لاش نوشہرہ کلاں کے مقام سے نکال لی گئی. ڈسٹرکٹ ایمرجنسی آفیسر میر عالم خان نے اویس بابر اور ان کی تمام ٹیم کو مبارک باد دیتے ہوئے کہا کہ ریسکیو1122 اسی طرح محنت اور لگن سے کام کرکے عوام کی خدمت کے لیے دن رات ایک کر دیتی ہے اور کسی بھی ایمرجنسی کے دوران ان کی مدد کرتی ہے۔ڈیرہ غازیخان کے نواحی علاقہ پائیگاہ کی بستی بندوانی میں آسمانی بجلی گرنے سے دسویں کاطالبعلم محمدرفیق کھوسہ شدیدزخمی ہوگیاہے جسے طبی امدادکے لیئے ریسکیو1122 نے ٹیچنگ ہسپتال ڈیرہ ٹراسنٹرمنتقل کردیاگیاہے جہاں اس کی حالت خطرے سے باہربتائی جاتی ہے۔

طوفان،ہلاکتیں

لاہور،اسلام آباد(خبر نگار ،نیوزایجنسیاں)پنجاب کے بیشتر علاقوں میں بوندا باندی کے بعد ہلکی بارش اور ٹھنڈی ہوائیں چلنے سے موسم خوشگوار ہوگیا۔لاہور اور گردونواح میں رات گئے بادل چھا گئے اور پہلے بوندا باندی اور پھر ہلکی سی بارش شروع ہوگئی۔ اسکے ساتھ ساتھ تیز ٹھنڈی ہوائیں بھی چلنے لگیں، جس سے کئی دنوں سے جاری گرمی کا زورٹوٹ گیا ہے۔محکمہ موسمیات کا کہنا ہے کہ ملکہ کوہسار مری اور گلیات میں آج سے بدھ کے دوران وقفے وقفے سے شدید بارشوں کا امکان ہے اور ڑالہ باری بھی ہو سکتی ہے ، طوفانی بارشوں کی وجہ سے مری کے مختلف علاقوں میں لینڈسلائیڈنگ کا بھی خطرہ ہے، تاہم بارشوں کے بعد مری میں پانی کی قلت کا کافی حد تک خاتمہ ہو جائے گا۔دوسری جانب مختلف شہروں میں بارشوں کا سلسلہ شروع ہوگیا ہے اٹک میں تیز ہواؤں کے بعد موسلا دھار بارش اور ڑالہ باری سے گردونواح کے ندی نالے پانی سے بھر گئے موسلا دھار بارشوں سے گرمی کی شدت میں کمی اور موسم خوشگوار ہو گیا ۔کامرہ کینٹ میں بھی تیز آندھی اور ڑالہ باری کے ساتھ بارش ہوئی جس کے باعث گندم کی فصل کو شدید نقصان پہنچا، آندھی سے بجلی کا نظام درہم برہم ہوگیا ہے ۔خیبرپختونخوا،فاٹا،اسلام آباد،بالائی پنجاب میں آج سے منگل تک کہیں کہیں بارش کاامکان ہے۔ بالائی سندھ میں آج اور کل چند مقامات پرگرج چمک کیساتھ بارش کا امکان جب کہ شمال مشرقی بلوچستان، وسطی، جنوبی پنجاب میں چند مقامات پرگرج چمک کیساتھ بارش کی پیشگوئی کی گئی ہے۔

مزید : صفحہ اول