مسئلہ کشمیر کا حل فوجی یا سیاسی؟ ہم آج تک طے نہیں کر سکے،فضل الرحمن

مسئلہ کشمیر کا حل فوجی یا سیاسی؟ ہم آج تک طے نہیں کر سکے،فضل الرحمن

لاہور(آئی این پی) جمعیت علمائے اسلام (ف)کے سربراہ مولانا فضل الرحمن نے کہا ہے کہ بھارت کشمیر میں دہشت گردی کر رہا ہے جسکے خلاف شدید تر ین احتجاج کر نا ہوگا ‘دنیا خاموش تماشائی بننے کی بجائے بھارتی مظالم کا نوٹس لے ‘ کشمیر مسئلے کا حل فوجی ہے یا سیاسی ہم آج تک طے نہیں کر سکے کشمیر مسئلے کا حل سیاسی ہے‘ہم بھارت سے بھی کہتے ہیں کہ وہ سیاسی حل کی طرف آئے، ہم سیاسی حل کی بات پہلے سے کررہے ہیں ہم غیر سنجیدگی کا مظاہرہ کر کے اپنا نقصان کررہے ہیں، کسی کے منہ پر کالک مل دینا پارلیمنٹ کے منہ پر کالک ملنے کے مترادف ہے۔ اتوار کے روز مولانا امجد خان اور دیگر سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے مزید کہا کہ بھارت کی جانب سے کشمیر یوں پر ہونیوالے مظالم جیسے واقعات میں صرف یکجہتی کا لفظ کافی نہیں عوام کو سڑکوں پر آکر ظلم و بربریت کے خلاف آواز اٹھانی ہوگی۔ بھارت کے مفاد میں بھی یہی ہوگا وہ اقوام متحدہ کی قرار داداوں کے مطابق مسئلہ کشمیر کو حل کر یں اسکے بغیر خطے میں امن قائم نہیں ہوسکتا ۔

فضل الرحمان

مزید : علاقائی