طورخم بارڈر پر عوام سے سوچھے سمجھے منصوبے کے تحت روزگار چھیننا جارہا ہے،معراج الدین

طورخم بارڈر پر عوام سے سوچھے سمجھے منصوبے کے تحت روزگار چھیننا جارہا ...

خیبر ایجنسی (بیورورپورٹ)خیبر ایجنسی لنڈی کوتل پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے طورخم کسٹم کلیئرنس ایجنٹس کے چیئرمین معراج الدین شینواری نے کہا کہ طورخم بارڈر پر عوام سے سوچھے سمجھے منصوبے کے تحت روزگار چھیننا جارہا ہے اور ہزاورں لوگوں کو بے روزگا رکیا جا رہا ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت ایک طرف قبائلی عوام کو روزگار فراہم کرنے کے بلند بانگ دعوے کرتے ہیں اور دوسری طرف قبائلی عوام سے مختلف حیلے بہانوں سے روزگار ختم کر رہے ہیں جس کی وجہ سے قبا ئلی عوام کے مشکلات میں مزید اضافہ ہوتا جا رہا ہیں جو افسوس ناک ہے معراج الدین نے کہاکہ خیبر ایجنسی لنڈی کوتل اور طورخم میں خاصہ دار فورس سے اختیارات لینا سراسرظلم ہیں کیونکہ خاصہ دار فورس کی تنخواہیں نہ ہونے کی برابر ہیں بلکہ خاصہ دار فورس اہلکار سسٹم کے تحت کھانے پینے کپڑے اور اسلحہ اپنے وسائل سے بندوبست کر تے ہیں اگر ایک دم اس سے اختیارات واپس اور سسٹم سے آوٹ کرنے مسائل پیدا ہو سکے ہیں انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف جنگ میں لیویزفورس اور خاصہ دار فورس کے جوانوں نے بیش بہا قربانیاں دی ہیں اور علاقے کے امن کے خاطر اپنے جانو ں کے نظرانے پیش کئے ہیں اس لئے اعلی حکام سے مطالبہ کرتے ہیں کہ لنڈیکوتل طورخم کے چیک پوسٹوں پر خاصہ دار فورس کو اختیارات دی جائے بصورت دیگر بھرپور احتجاجی مظاہرے کرینگے

مزید : پشاورصفحہ آخر