بے قاعدگیوں کے مزید میگا کرپشنسکینڈلز آنے والے ہیں : سردار حسین بابک

بے قاعدگیوں کے مزید میگا کرپشنسکینڈلز آنے والے ہیں : سردار حسین بابک

پشاور ( پ ر ) عوامی نیشنل پارٹی کے صوبائی جنرل سیکرٹری سردار حسین بابک نے کہا ہے کہ احتساب کمیشن میں ہونے والی بے قاعدگیوں کے بعد کرپشن مافیا کا اصل روپ عوام کے سامنے آ چکا ہے اور اب وہ مزید قوم کو بے وقوف نہیں بنا سکتے ،یہ بات واضح ہو چکی ہے کہ احتساب کمیشن مخالفین کے خلاف ہتھیار کے طور پر استعمال کرنے کیلئے بنایا گیا اور اس میں اپنے چہیتوں کو غیر قانونی طور پر بھرتی کیا گیا،ان خیالات کا اظہار انہوں نے بونیر میں مختلف اجتماعات اور شمولیتی تقاریب سے خطاب کرتے ہوئے کیا ،انہوں نے کہا کہ احتسابی ادارے بلین سونامی ٹری اور باب پشاور فلائی اوور کی تحقیقات کریں تو اربوں روپے کی مزید کرپشن سے بھی پردہ اٹھ سکتا ہے،،انہوں نے کہا کہ احتساب کمیشن در اصل مخالفین کی پگڑیاں اچھالنے کیلئے قائم کیا گیا اور اپنے منظور نطر افراد کو نوازنے کیلئے بے قاعدگیوں کی انتہا کر دی گئی ، انہوں نے کہا کہ کپتان کا دن رات کرپشن کے خاتمے کا ورد ڈھونگ ہے اپنی صوبائی حکومت کی ہر ایک کرپشن کے خلاف ان کے پاس کہنے کو کچھ نہیں ، سردار حسین بابک نے کہا کہ ابھی تو شروعات ہے آگے چل کر مزید بڑے سکینڈلز سامنے آنے والے ہیں، پشاور میٹرو موجودہ حکومت کے بس کی بات نہیں اے این پی اقتدار میں آ کر منصوبہ مکمل کرے گی، کیونکہ موجودہ حکومت نے اسے صرف اپنی کمیشن کیلئے شروع کیا ہے،انہوں نے کہاکہ نام نہاد تبدیلی والے ساڑھے چارسال تک لاہور میٹرو کو جنگلہ بس کہتے رہے اب حکومت نے پشاور میٹرو کو اپنی کمیشن کے لئے شروع کیا یہ منصوبہ ان کے دور حکومت میں مکمل نہیں ہوگا یہ اوردیگر منصوبے اقتدار میں آکر ہم مکمل کریں گے، انہوں نے کہاکہ تبدیلی کے دعویداروں نے صوبے کے تمام نظام کو تباہ وبرباد کیا اقتدار میں آکر نئے سرے سے ادارے بحال کریں گے، انہوں نے کہاکہ کرپشن کے خاتمے کے بلند وبانگ دعوے کرنے والوں کی فائلیں نیب نے کھول دی ہیں اور ملم جبہ اراضی سے لے کر وزیراعلیٰ کے حکم پر پی ڈی اے کے ٹھیکوں کی بازپرس شروع ہوگئی ہے،سردار حسین بابک نے کہاکہ ابھی تو حساب کتاب کی شروعات ہے آنے والے دنوں میں بات دورتک جائے گی ان کاکہناتھاکہ پی ٹی آئی کے اپنے اراکین اسمبلی وزراء پر اور وزیر اپنے وزیراعلیٰ کے خلاف سلطانی گواہ بن رہے ہیں،اانہوں نے مزید کہاکہ اقتدار چھوڑتے وقت اے این پی نے خزانہ بھراچھوڑاتھا اب خزانے کی صحت اور وزیراعلیٰ کی صحت میں کوئی فرق نہیں اور ترقیاتی منصوبوں کے لئے قرضے لئے جارہے ہیں اے این پی اقتدار میں آکر قرضے بھی ختم کرے گی اور رکے ہوئے منصوبے بھی دوبارہ شروع کرے گی انہوں نے مزید کہاکہ پختون جاگ گئے ہیں وہ مزید خوشنما دعووں اور وعدوں میں نہیں آئیں گے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر