مقبوضہ کشمیر میں اس وقت جو انسانی بدترین قتل عام ہو رہا ہے ،دانیال شہاب مدنی

مقبوضہ کشمیر میں اس وقت جو انسانی بدترین قتل عام ہو رہا ہے ،دانیال شہاب مدنی

مظفرآباد (بیورورپورٹ ) مرکزی جمعیت اہل حدیث آزدا جموں وکشمیر کے ناظم اعلی دانیال شہاب مدنی نے کہا ہے کہ آزاد جموں و کشمیر کی تمام سیاسی جماعتوں کو اپنی اپنی جماعت کے اندر ایک کشمیر سیل بھی قائم کرنا چاہیے اور اس کے ساتھ ساتھ تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کا مشترکہ طور پر کشمیر لبریشن فورم طرز کا اتحاد بنائے جانے کی بھی ضرورت ہے ۔ مقبوضہ کشمیر میں اس وقت جو انسانی بدترین قتل عام ہو رہا ہے ،ایسے میں آزادکشمیر اور پاکستان کی جانب سے مقبوضہ کشمیر کے عوام کو بھرپور یکجہتی کا پیغام دینے کی اشد ضرورت ہے اور الحمدللہ پاکستان و آزاد جموں کشمیر کی سطح پر شوپیاں سانحہ کے بعد یہ پیغام دینے میں ہم بڑی حد تک کامیاب بھی ہوئے ہیں لیکن اس یکجہتی سے آگے بڑھ کر ابھی بہت کچھ کرنا باقی ہے ۔ جدوجہد آزادی کشمیر کی تاریخ میں شاید ہی کبھی مقبوضہ کشمیر کے عوام کی طرف سے اتنی شدت سے پاکستان کے ساتھ محبت کا اظہار کیا گیا ہو،جو کہ گزشتہ ایک عرصے سے بالعموم اور برہان شہید وانی کی شہادت کے بعد بالخصو ص کیا جا رہا ہے ۔مقبوضہ کشمیر میں جاری عسکری تحریک 100 فیصد مقامی ہے ۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے دارلحکومت مظفرآباد میں تحریک آزادی کشمیر کی موجودہ صورتحال پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔ مرکزی جمعیت اہل حدیث آزاد جموں وکشمیر کے ناظم اعلی دانیال شہاب مدنی نے اپنے خطاب میں کہا کہ مقبوضہ کشمیر میں جو اس وقت حالات ہو چکے ہیں،اس میں آزاد کشمیر حکومت کو اپنی پالیسی اپ ڈیٹ کرنے کی ضرورت ہے ۔ ہم شاید ابھی تک یہاں مسئلہ کشمیر کو اجاگر کرنے کے لیے سرکاری سرپرستی کا ہی تاثر دے رہے ہیں جس سے ہمارا اس طرح کا پیغام بھارت اور دنیا میں نہیں جا رہا۔انہوں نے کہا کہ ہمیں اپنی نوجوان نسل کو فوکس کرنے کی اشد ضرورت ہے ،آزاد جموں وکشمیر کے تعلیمی اداروں کے نوجوان نسل کو مسئلہ کشمیر کے حوالے سے کردار ادار کرنے کے لیے تیار کرنا ہو گا۔ ہمیں اپنی نوجوان نسل کو شاید اب بندوق تو نا تھمانی پڑے لیکن اسے قلم اور کمپیوٹرکے Key board کے استعمال کے لیے فکری تربیت دینا ہو گی۔ بدقسمتی سے ہمارے یونیورسٹی اور کالج کے نوجوانوں کو مسئلہ کشمیر کے لیے آواز اٹھانے کے سلسلہ میں آج تک تیار نہیں کر سکے۔ مروجہ تعلیم کے ساتھ ساتھ انہیں آزادی کی جدوجہد کی تربیت بھی دینا ،بیس کیمپ کے تعلیمی اداروں کی ترجیحات ہونی چاہیے ہیں۔ دانیال شہا ب مدنی نے اپنے خطاب میں کہا کہ آزاد جموں و کشمیر کی تمام سیاسی جماعتوں کو اپنی اپنی جماعت کے اندر ایک کشمیر سیل بھی قائم کرنا چاہیے اور اس کے ساتھ ساتھ تمام سیاسی و مذہبی جماعتوں کا مشترکہ طور پر کشمیر لبریشن فورم طرز کا اتحاد بنائے جانے کی بھی ضرورت ہے ۔ انہوں نے کہا کہ بھارت اس وقت اپنے میڈیا کے زریعے بالخصوص سوشل میڈیا کو آزاد کشمیر کے خلاف بہت بری طرح استعمال کر رہا ہے ،آزاد جموں وکشمیر میں غربت،جہالت اور دہشت گردوں کے کیمپ کا جھوٹا تاثر دے کر ڈنکے کی چوٹ پر جھوٹ بول رہا ہے ،جبکہ ہم آزاد کشمیر حکومت کی سطح پر آج تک الیکٹرانک یا پرنٹ میڈیا کی سطح پر یا کسی لٹریچر ،کتابچوں کی سطح پر یہ نہیں بتا سکے کہ آزاد کشمیر کتنا ترقی یافتہ ہے اور یہاں خواندگی کی شرح میں کتنا تنوں ہے اور یہاں دہشت گردی نہیں بلکہ امن کا ماحول ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری مقبوضہ کشمیر میں اپنا خون دے کر پاکستان کے ساتھ اپنی والہانہ محبت کا اظہار کر رہے ہیں تو ایسے میں یہ ہم پر بھی لازم ہے کہ ہم اپنے قول و فعل اور کردارسے پاکستانیت کا اظہار کر کے مقبوضہ کشمیر کے عوام کے لیے رول ماڈل بن جائیں ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...