کراچی ، دہشتگردوں ، بھتہ خوروں کیخلاف آپریشنکی تیاریاں مکمل

کراچی ، دہشتگردوں ، بھتہ خوروں کیخلاف آپریشنکی تیاریاں مکمل

کراچی (صباح نیوز)کراچی کے علاقے لیاری میں دہشت گردوں اوربھتاخوروں کیخلاف آپریشن کی تیاریاں مکمل کر لی گئیں ، دہشت گردوں کے سر کی قیمت 10سے50لاکھ روپے تک مقرر کرنے کیلئے ڈئی آئی جی ساؤتھ نے آئی جی سندھ کو خط لکھ دیا ۔پولیس ذرائع کے مطابق لیاری کے 18دہشت گردوں کے سروں کی قیمت مقررکرنے کیلئے ڈی آئی جی ساؤتھ نے آئی جی کو خط بھیجا ہے جس میں موقف اپنایا گیا ہے کہ عزیر بلوچ کا قریبی ساتھی تاج عرف تاجو اور حال ہی میں ذکری محلے میں رینجرز پر حملے میں ملوث زاہد لاڈلہ بھی ان 18 ملزمان میں شامل ہیں۔سندھ پولیس نے لیاری میں بیامنی کے ذمے دار دہشت گردوں کی فہرست تیار کرلی گئی۔ڈی آئی جی ساؤتھ کی جانب سے آئی جی سندھ کو لکھے گئے خط میں لیاری گینگ وار کے 18 دہشت گردوں کے سروں کی قیمت 10سے 50 لاکھ روپے تک مقرر کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔ان دہشت گردوں کیخلاف کلاکوٹ، کلری، نیپئر، بغدادی، کھارادر، ڈاکس، چاکیواڑہ اور جیکسن تھانوں میں مقدمات درج ہیں۔خط میں عزیر بلوچ کے قریبی ساتھی تاج عرف تاجو اور مومن خان کے سرکی قیمت 50 ،50 لاکھ روپے مقرر کرنے کی سفارش کی گئی ہے جبکہ اولڈ سٹی ایریا میں تاجروں سے بھتہ وصول کرنے میں سرفہرست وصی اللہ لاکھو ، ایاز زہری اور فاروق عرف مایا کے سروں کی قیمت 20 لاکھ روپے مقرر کئے جانے کی سفارش کی گئی ہے۔خط کے مطابق فیصل پٹھان، شفیع پٹھان، ملا نثار ، زاہد لاڈلہ، شاہد عرف ایم سی بی کے سروں کی قیمت 20 لاکھ مقرر کئے جانے ،جبکہ سراج الاسلام، جبرائیل عرف پٹھان اور آغا شوکت کے سروں کی قیمت 10 دس لاکھ روپے مقرر کرنے کی سفارش کی گئی ہے۔فہرست میں نامزد ملزمان لمبے عرصہ سے مفرور ہیں جنہیں پولیس اور سیکورٹی ادارے گرفتار کرنے میں تاحال ناکام ہیں۔

کراچی آپریشن

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر