پان گٹگا اور چھالیہ کی فروخت کے خلاف تاجرالائنس کا مظاہرہ،

پان گٹگا اور چھالیہ کی فروخت کے خلاف تاجرالائنس کا مظاہرہ،

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) کراچی تاجرا لائنس ایسوسی ایشن کے چیئرمین وبانی عام آدمی پاکستان ایاز میمن موتی کی قیادت میں پان گٹکا اور چھالیہ کی فروخت کے خلاف مظاہرہ ، مظاہرین کی جانب سے تاجر الائنس کے ڈیفنس آفس سے شارع فیصل تک احتجاجی ریلی نکالی گئی ،ریلی میں شریک تاجروں سمیت کیماڑی سے آئے ہوئے لوگوں کی کثیر تعداد موجود تھی ،مظاہرین نے اپنے ہاتھوں میں احتجاجی پوسٹر اور بینر زاٹھارکھے تھے ،مظاہرین سے خطاب میں تاجر رہنما ایازمیمن موتی والا کا کہنا تھا کہ گٹکا اور چھالیہ کھانے سے منہ کا کینسر تیزی سے پھیل رہاہے ،اس کے علاوہ شہر کی نوجوان نسل گردے کی پتھری اور گلے کی مختلف بیماریوں کا شکار ہورہی ہے ۔کیونکہ گٹکا اور چھالیہ میں ڈالے جانے والے مختلف اقسام کے کیمیکل عوام کو موت کے منہ میں دھکیل رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ پاکستان کے اندر کراچی کی عوام سب سے زیادہ منہ کے کینسر میں مبتلا ہے۔سندھ حکومت گزشتہ تین سالوں سے پان اور گٹکا کھانے والوں کے خلاف پابندیوں کی بات کررہی ہے مگر اس کی فروخت میں عملدرآمد کرانے میں مکمل ناکام نظر آتی ہے ۔ اس موقع پر تاجر الائنس کے رہنما سینئروائس چیئرمین حمیدالدین جنرل سیکرٹری، معراج احمدخان، سہل افضل، لیگل ایڈوائزر،عامرضیا ،ضلعی صدور معراج محمد قریشی ،حاجی محمداسماعیل، سید اخترحسین ،غلام یاسین بھی مظاہرے میں شریک تھے۔ایاز میمن کا کہنا تھا کہ ہمارے احتجاج کا مقصدصرف یہ ہے کہ ہم عوام کو کینسر جیسے موزی مرض سے بچانا چاہتے ہیں اور ہمیشہ صحت مند معاشرے کی تکمیل کے لیے اپنی جدوجہد کو جاری رکھیں گے،انہوں نے کہاکہ کراچی میں گلی محلوں کے ساتھ اسکولوں اور کالجوں کی کینٹینوں میں گٹکا فروخت ہو رہاہے ۔کچھ لوگوں نے مقامی پولیس کے تعاون سے یہ کاروبار جاری رکھے ہوا ہواہے ،کمشنر کراچی پان اور گٹکا بیچنے والے دکانداروں پر کریک ڈان کریں ہم ان کا ساتھ دینگے۔مظاہرے میں شریک جروں نے آئی جی سندھ سے مطالبہ کیا کہ وہ نشہ آور اشیا فروخت کرنے والے والے دکانداروں کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کریں تاکہ نوجوان نسل کو گٹکے کی تباہی سے بچایا جاسکے ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...