16اپریل کو پریس کلب پر غیر معینہ مدت کیلئے دھرنے کا اعلان

16اپریل کو پریس کلب پر غیر معینہ مدت کیلئے دھرنے کا اعلان

کراچی (اسٹاف رپورٹر ) محکمہ اسکول ایجوکیشن میں 2012ء میں بھرتیوں کے بعد سے ابتک تنخواہیں جاری نہ کرنے کے خلاف اساتذہ تنظیموں نے16اپریل بروز پیر کو کراچی پریس کلب پر احتجاج کیساتھ غیر معینہ مدت کیلئے دھرنا دینے کا اعلان کر دیا ہے ،تنخواہوں سے محروم اساتذہ کا کہنا تھا کہ سندھ حکومت نے ہمیں جعلی اور اصلی کے گھن چکر میں جان بوجھ کر الجھایا ،ہمارے صبر کا پیمانہ لبریز ہو چکا ہے اساتذہ حکومت کیساتھ فائنل راؤنڈ کھیلنے کیلئے تیار ہیں، اب دمادم مست قلندر ہو گا اور 6سال سے تنخواہوں سے محروم اساتذہ اپنا حق چھین کر دیکھائیں گے ۔تفصیلات کے مطابق محکمہ اسکول ایجوکیشن میں سال2012ء کے دوران بھرتی ہونیوالے سندھی لینگویج ٹیچرز ،ڈرائنگ ٹیچرز ،عربک ٹیچرزاورینٹل ٹیچرز سمیت دیگر ٹیکنیکل ٹیچرز کی نمائندہ تنظیم نیو ٹیچرز ایکشن کمیٹی اور ٹیچرز ایسوسی ایشن کراچی کا ہنگامی اجلاس اتوار کے روز منعقد ہوا جس میں نیو ٹیچرز ایکشن کمیٹی کے چیئرمین ابو بکر ابڑو ،سیکریٹری افضل کوریجو،ٹیچرز ایسوسی ایشن کراچی کے چیئرمین ظہیر احمد بلوچ ،جنرل سیکریٹری آفتاب میمن سمیت کراچی بھر کے اساتذہ نے بھر پور شرکت کی ۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے ابو بکر ابڑو نے کہا کہ سند ھ کے دیگر اضلاع میں سال2012ء میں بھرتی ہونیوالے ٹیکنیکل کیڈر کے اساتذہ کو تنخواہیں دی جا رہی ہیں مگر کراچی اور سکھر ڈویژن کے اساتذہ کو گذشتہ6برس سے تنخواہوں سے محروم رکھا گیا ہے ۔رہنماؤں کا کہنا تھا کہ ہم نے صبر کی تمام حد وں کو پار کر لیا،سندھ حکومت نے ہمیں جتنا بیوقوف بنا نا تھا بنا لیا ،اب ہم حکومت کے لولی پاپ میں نہیں آئیں گے ،روٹی کپڑا اور مکان کا نعرہ لگانے والے آج ہم سے یہ تینوں چیزیں چھین رہے ہیں مگر اب ہم خاموش نہیں رہیں گے،اینٹ کا جواب پتھر سے ضرور دیں گے ۔ٹیچرز ایسوسی ایشن کراچی کے چیئرمین ظہیر احمد بلوچ کا کہنا تھا کہ اب مذاکرات کے تمام دروازے ہم نے بند کر دیے ہیں ،اساتذہ تنخواہوں کا ایک پوائنٹ ایجنڈے لیکر سڑکوں پر آ رہے ہیں ،اساتذہ اپنا احتجاج اس وقت تک جاری رکھیں گے جب تک انہیں تنکواہیں جاری نہیں کر دی جاتیں تنخواہیں مل جانے تک جاری رکھیں گے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر