بھارت نے وہ کام کر دیا جو آج تک تاریخ میں نہ ہوا تھا،پاکستانی سفارتکار کو اشتہاری قرار دے دیا گیا ،الزام کیا لگایا ہے؟ انتہائی خطرناک خبر آگئی

بھارت نے وہ کام کر دیا جو آج تک تاریخ میں نہ ہوا تھا،پاکستانی سفارتکار کو ...

نئی دہلی(ڈیلی پاکستان آن لائن) بھارت سفارتی آداب بھول گیا ، تاریخ میں پہلی بار بھارتی نیشنل انویسٹی گیشن ایجنسی (این آئی اے)نے پاکستانی سفارتکار کو اپنی ’اشتہاریوں کی فہرست ‘میں شامل کرلیا اور اس کی تصاویر جاری کردی ہیں۔

بھارت میں گزشتہ کچھ عرصے سے پاکستانی سفارتکاروں اور ان کے اہلخانہ کو تواتر کے ساتھ ہراساں کیا جارہا ہے اور اب بھارت نے ایک قدم آگے بڑھتے ہوئے پاکستانی سفارتکاروں کو اشتہاری قرار دے دیا ہے۔ بھارتی خبر ایجنسی کا کہنا ہے کہ سفارتکارعامرزبیر صدیقی جو کولمبو کے پاکستانی ہائی کمشنر ویزا قو نصلر کے طور پر تعینات تھے۔ان کو مزید دو پاکستانی افسروں کے ساتھ اس فہرست میں شامل کیا جا چکا ہے جو امریکہ اور اسرائیل کے قو نصل خانے میں 26/11کے دھماکوں اور 2014 جنوبی بھارت میں آرمی اور بحریہ قیادت کے خلاف کاروائیوں کی سازشوںمیں ملوث تھے۔این آئی اے کا یہ بھی دعویٰ ہے کہ سری لنکا کے ہائی کمیشن میں تعینات چوتھا پاکستانی آفیسر بھی سازشوں میں ملوث تھا۔

این آئی اے نے فروری میں صدیقی کے خلاف چارج شیٹ بنائی تھی جبکہ دوسرے تین آفیسرز کی شناخت ابھی تک نہیں ہو سکی۔ دو لوگ وہ جو کہ صدیقی سے الگ اشتہاری فہرست میں ڈالے گئے ہیں ان میں ایک ’پاکستانی انٹیلی جنس آفیسر وینیتھ اور دوسرا باس الیاس شاہ ‘کے خفیہ نام سے جانے جاتے تھے۔

بھارتی ایجنسی کے ایک اہلکار کا کہنا ہے کہ ایسا تاریخ میں پہلی دفعہ ہوا ہے کہ بھارت نے کسی پاکستانی سفارتکار کا نام اشتہاریوں کی فہرست میں ڈالا ہو اور اس کے خلاف ریڈ کارنر نوٹس طلب کیا ہو۔این آئی اے نے پاکستانی آفیسرز پر الزام لگایا ہے کہ یہ آفیسر جب اپنی خدمات 2009سے 2016تک سری لنکا میں سر انجام دے رہے تھے تب انہوں نے بھارتی ریاست چنائی اور جنوبی بھارت کے کچھ علاقوں میں اپنے کارندوں کے ذریعے دھماکوں کی منصوبہ بندی کی تھی۔صدیقی نے مبینہ طور پر کارروائیاں کروانے لیے سری لنکن محمد شاکر حسینی ، ارون سیلورج، سیوابلان اور تمیم انصاری کی خدمات حاصل کی ہوئی تھیں، ان تمام افراد کو ایجنسیوں نے گرفتار کر لیا تھا۔

خیال رہے کہ ویانا کنونشن کے تحت سفارتکاروں کو کرمنل کارروائی کے خلاف استثنیٰ حاصل ہوتا ہے یہی وجہ ہے کہ چند روز قبل اسلام آباد میں نوجوان کو گاڑی تلے کچلنے والے امریکی ملٹری اتاشی کو گرفتار نہیں کیا گیا تاہم بھارت کی جانب سے پاکستانی سفارتکاروں پر دہشتگردی کے الزامات عائد کرنا اور ان کے نام اشتہاریوں کی فہرست میں شامل کرنا نہ صرف ویانا کنونشن کی خلاف ورزی ہے بلکہ مودی سرکار کی پست ذہنیت کی عکاسی بھی ہے۔

مزید : Breaking News /اہم خبریں /قومی /بین الاقوامی

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...