آپ کو گھر کے برتن اور اپنے بستر کا میٹرس کتنے عرصے بعد تبدیل کر دینے چاہئیں؟ جانئے وہ بات جو آپ کو انتہائی سنگین بیماری سے بچا سکتی ہے

آپ کو گھر کے برتن اور اپنے بستر کا میٹرس کتنے عرصے بعد تبدیل کر دینے چاہئیں؟ ...
آپ کو گھر کے برتن اور اپنے بستر کا میٹرس کتنے عرصے بعد تبدیل کر دینے چاہئیں؟ جانئے وہ بات جو آپ کو انتہائی سنگین بیماری سے بچا سکتی ہے

  

لندن(نیوز ڈیسک)روز مرہ استعمال کی بہت سی اشیاءایسی ہیں کہ جنہیں ایک مخصوص عرصے کے بعد بدلنے کی سخت ضرورت ہوتی ہے لیکن ہم انہیں تب تک استعمال کرتے رہتے ہیں جب تک یہ بالکل ناکارہ نہیں ہو جاتیں۔ یہ درست طرز عمل نہیں ہے اور ہماری صحت کے لئے مسائل کا سبب بن سکتا ہے۔ ان اشیاءکے استعمال اور تبدیلی کے بارے میں ماہرین کی آراءکیا ہیں، آئیے جانتے ہیں۔

’دی انڈیپینڈنٹ‘ کے مطابق دانتوں کی صحت کے ماہر ڈاکٹر بین ایٹکنز کا کہنا ہے کہ آپ کو اپنا ٹوتھ برش ہر تین ماہ بعد بدل لینا چاہیے۔ اگر اس کے ریشے پہلے ہی خراب ہوتے نظر آئیں تو اسے تین ماہ سے پہلے بھی ضرور بدل لینا چاہیے۔ سلیبرٹی ہیئر ڈریسر ہیمی سٹیونز کہتی ہیں کہ کنگھی کو ہفتے میں ایک بار صاف کرنا ضروری ہے۔ اس میں پھنسے ہوئے بال صاف کریں اور گرم پانی میں صابن گھول کر کنگھی کو کچھ دیر میں اس میں رکھ کر اچھی طرح صاف کریں۔

سیلی بلومبرگ نے بتایا کہ آپ کو گھر میں استعمال ہونے والی چپل میں جمع ہونے والے جراثیموں کا اندازہ ہی نہیں۔ اگر آپ کو اپنی صحت کی فکر ہے تو چپل کو وقتاً فوقتاً صابن سے دھونا مت بھولیں۔ کچن میں برتنوں کی صفائی کے لئے استعمال ہونے والے اسفنج کو ہر ہفتے تبدیل کریں کیونکہ اس میں بہت سے جراثیم اور بیکٹیریا جمع ہوجاتے ہیں۔

گھر میں استعمال ہونے والے جراثیم کش سپرے کو اگر تین ماہ تک استعمال کرلیا ہے تو اس کے بعد نئی بوتل لے آئیں کیونکہ پرانا سپرے زیادہ عرصے تک موثر نہیں رہتا۔ سلیپ کاﺅنسل کا مشورہ ہے کہ ہر آٹھ سال بعد آپ کو نیا گدا خریدنا چاہیے، کیونکہ اس سے زائد عرصے کے لئے استعمال ہونے والا گدا آپ کے جسم کے لئے آرام دہ نہیں رہتا اور کمر کے مسائل کا سبب بن سکتا ہے۔

قالین میں ہر طرح کے بیکٹیریا اور دیگر جراثیموں کے علاوہ گرد و غبار بھی جمع ہوتا رہتا ہے۔ جب آپ کا قالین 15 سال تک استعمال ہوچکا ہوتا ہے تو اس کے بعد صاف کرنے سے بھی یہ ٹھیک طور پر صاف نہیں ہوپاتا، لہٰذا اب اس کی جگہ نیا قالین خریدنا ہی بہتر حل ہے۔

پلاسٹک کے برتنوں کو ہر چھ ماہ بعد بدلنا ضروری ہے۔ اسی طرح جب آپ کا تولیہ آپ کو کھردرا محسوس ہونے لگے اور اس میں پانی جذب کرنے کی صلاحیت باقی نہ رہے تو سمجھیں یہ ناکارہ ہوگیا ہے۔ آپ کو اس صورتحال سے بچنے کے لئے ایک سال بعد تولیہ تبدیل کرلینا چاہیے۔ تکیے کا غلاف ہر تین ماہ بعد اچھی طرح دھوئیں کیونکہ اس میں جلد کے مردہ خلیات سمیت بے شمار اقسام کے بیکٹیریا جمع ہوتے رہتے ہیں جو آپ کے چہرے کی جلد کے لئے مسائل پیدا کرسکتے ہیں۔ دو سے تین سال بعد تکیہ تبدیل کرنا بھی ضروری ہے۔

مزید : ڈیلی بائیٹس /تعلیم و صحت