”نوازشریف سے پہلی ملاقات تب ہوئی جب وہ 1977 ءمیں چوہدری ظہور الہیٰ کے پاس آئے اور کہنے لگے کہ میں آپ کو یہ چیز دینا چاہتا ہوں “چوہدری شجاعت حسین نے بڑے راز سے پردہ اٹھا دیا ، نوجوان نوازشریف کیا دینے آئے ؟ جان کر آپ کی بھی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

”نوازشریف سے پہلی ملاقات تب ہوئی جب وہ 1977 ءمیں چوہدری ظہور الہیٰ کے پاس آئے ...
”نوازشریف سے پہلی ملاقات تب ہوئی جب وہ 1977 ءمیں چوہدری ظہور الہیٰ کے پاس آئے اور کہنے لگے کہ میں آپ کو یہ چیز دینا چاہتا ہوں “چوہدری شجاعت حسین نے بڑے راز سے پردہ اٹھا دیا ، نوجوان نوازشریف کیا دینے آئے ؟ جان کر آپ کی بھی حیرت کی انتہا نہ رہے گی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم پاکستان چوہدری شجاعت نے اپنی کتاب میں نوازشریف کے حوالے سے کئی اہم ترین انکشافات کیے ہیں ، انہوں نے اپنی کتاب ’سچ تو یہ ہے! ‘میں نوازشریف کے ساتھ ہونے والی پہلی ملاقات کے بارے میں بیان کرتے ہوئے کہاہے کہ نوازشریف کے ساتھ پہلا تعارف اور ملاقات 1977 میں اس وقت ہوئی جب جنرل ضیاءالحق نے بھٹو حکومت کا تختہ الٹنے کے فورا بعد 90 روز میں الیکشن کروانے کا اعلان کیا تھا ۔

چوہدری شجاعت نے نوازشریف سے پہلی ملاقات کو ’نوازشریف سے پہلا تعارف ‘کا عنوان دیا ہے ، انہوں نے انکشاف کرتے ہوئے کہا کہ میرے والد لاہور میں بھٹو کے مقابلہ میں الیکشن لڑرہے تھے۔ ایک روز ہم انتخابی مہم کی تیاری کے سلسلہ میں اپنے گھر کے دفتر میں بیٹھے تھے کہ ایک ملازم نے آکر بتایا کہ باہر کوئی نوجوان آیا ہے اور کہہ رہا ہے کہ اس نے چودھری ظہور الہٰی صاحب سے ملتا ہے۔ والد صاحب چونکہ میٹنگ میں مصروف تھے، انہوں نے پرویز الہٰی سے کہا کہ وہ اس نوجوان سے جاکر مل لیں۔

پرویز الہٰی باہر آئے تو ایک گورا چٹا کشمیری نوجوان برآمدے میں بیٹھا تھا۔ اس نے پرویز الہٰی کو اپنا وزیٹنگ کارڈ دیتے ہوئے کہا کہ اسے اس کے والد میاں محمد شریف نے بھیجا ہے اور کہا ہے کہ وہ چودھری ظہور الہٰی کی الیکشن مہم میں فنڈز دینا چاہتے ہیں۔ پرویز الہٰی نے اس نوجوان کا شکریہ ادا کیا اور کہا کہ الیکشن مہم کے لئے ہم کسی سے فنڈ نہیں لیتے اور یوں یہ سرسری سی ملاقات ختم ہوگئی۔

انتخابی میٹنگ سے فارغ ہونے کے بعد میرے والد نے پوچھا کہ باہر کون تھا، تو پرویز الہٰی نے بتایا کہ اس طرح میاں محمد شریف صاحب کا بیٹا آیا تھا اور کہہ رہا تھا کہ ان کے والد الیکشن کے لئے فنڈز دینا چاہتے ہیں۔ والد صاحب نے کہا، تم نے اس کو بتایا نہیں کہ ہم الیکشن کے لئے فنڈز نہیں لیتے۔ پرویز الہٰی نے کہا، میں نے تو اس کو یہ بات بتادی تھی لیکن آپ بھی بتادیں۔ یہ کہہ کر اس نوجوان کا وزیٹنگ کارڈ میرے والد کو دے دیا۔یہ نوجوان میاں نواز شریف تھے۔ 1977ءمیں اس ملاقات سے پہلے ہم کبھی ان سے ملے، نہ ان کے بارے میں سنا تھا۔

مزید : قومی /ڈیلی بائیٹس