”نوازشریف کو پہلی مرتبہ وزیراعظم بنے تو میں نے انہیں تین نصیحتیں کیں ، لیکن انہوں نے تینوں پر ہی الٹ عمل کیا “چوہدری شجاعت حسین نے ایسا انکشاف کر دیا کہ جان کر آپ کی بھی ہنسی نہ رکے گی

”نوازشریف کو پہلی مرتبہ وزیراعظم بنے تو میں نے انہیں تین نصیحتیں کیں ، لیکن ...
”نوازشریف کو پہلی مرتبہ وزیراعظم بنے تو میں نے انہیں تین نصیحتیں کیں ، لیکن انہوں نے تینوں پر ہی الٹ عمل کیا “چوہدری شجاعت حسین نے ایسا انکشاف کر دیا کہ جان کر آپ کی بھی ہنسی نہ رکے گی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن )سابق وزیراعظم پاکستان چوہدری شجاعت نے اپنی کتاب میں نوازشریف کے حوالے سے کئی اہم ترین انکشافات کیے ہیں ، انہوں نے اپنی کتاب ’سچ تو یہ ہے! ‘میں کہا ہے کہ میں نے نوازشریف کو تین نصیحتیں کی تھیں لیکن انہوں نے ان تین باتوں پر الٹ ہی عمل کیا ۔

تفصیلات کے مطابق چوہدر شجاعت کا اپنی کتاب میں کہناہے کہ وزارتِ عظمیٰ کا حلف لینے سے پہلے اسلام آباد ہوٹل میں نواز شریف نے ایک پارٹی میٹنگ بلائی۔ وہاں بہت سے مقررین نے تقریریں کیں۔ میرا تقریر کرنے کا کوئی ارادہ نہیں تھا۔ مجھے مجبوراً تقریر کرنی پڑی۔ یہ دیکھ کر کہ ارکان قومی اسمبلی کس طرح نواز شریف کی چاپلوسیاں کررہے ہیں، میں نے کہا کہ میں بھی کچھ کہنا چاہتا ہوں۔ میں نے کہا، میاں صاحب میں صرف تین باتیں کہنا چاہوں گا۔ جب آپ وزیراعظم بن جائیں تو ان تین باتوں کا بہت خیال رکھیں۔

1۔ چاپلوسوں کی باتوں میں نہ آئیں

2۔ منافقوں سے دور رہیں

3۔ آپ میں ”مَیں“ نہیں آنی چاہیے

یہ تین باتیں کرکے میں سٹیج سے نیچے اترا تو تمام ہال تالیوں سے گونج اُٹھا۔

جب ہم گاڑی مین بیٹھ کر واپس گھر آرہے تھے تو اسمبلی کے آگے سے گزرتے ہوئے میاں صاحب نے مجھ سے پوچھا کہ آپ جو تین باتیں بتارہے تھے، وہ دوبارہ بیان کریں۔ میں نے دوبارہ انہیں وہ باتیں سنائیں۔ لیکن افسوس سے کہنا چاہوں گا کہ میاں صاحب نے میری تینوں باتوں پر اُلٹ ہی عمل کیا۔

مزید : قومی