فرانس سعودی عرب میں سرمایہ کاری کرنے والا تیسرا بڑا ملک بن گیا

فرانس سعودی عرب میں سرمایہ کاری کرنے والا تیسرا بڑا ملک بن گیا
فرانس سعودی عرب میں سرمایہ کاری کرنے والا تیسرا بڑا ملک بن گیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

پیرس(صباح نیوز) فرانس سعودی عرب میں سرمایہ کاری کرنے والا تیسرا بڑا ملک بن گیا ، سعودی عرب میں فرانس کی 80فرمیں سرمایہ کاری کررہی ہیں ۔

غیرملکی خبررساں ادارے کے مطابق سعودی عرب، فرانس بزنس کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر محمد بن لادن نے ولی عہد شہزادہ محمد بن سلمان بن عبدالعزیز کے دورہ فرانس کی اقتصادی اور معاشی اہمیت پر روشنی ڈالتے ہوئے اسے غیرمعمولی اہمیت کا حامل قرار دیا ہے ،بزنس کونسل کے چیئرمین ڈاکٹر محمد بن لادن نے سعودی ولی عہد کے دورہ فرانس کے بارے میں بات کرتے ہوئے کہا کہ ان کے اس تاریخی دورے کے دوران کئی شعبوں میں دوطرفہ تعاون کے معاہدوں کی توقع ہے۔ ولی عہد محمد بن سلمان ویژن 2030 کے اہداف کے پیش نظر زیادہ سے زیادہ غیرملکی سرمایہ کار کمپنیوں سے سرمایہ کاری کے حصول کے لیے کوشاں ہیں۔ڈاکٹر بن لادن نے مزید کہا کہ وہ سعودی ولی عہد کے دورہ فرانس کے موقع پر مقامی تاجروں اور بڑے سرمایہ کاروں کا ایک اجلاس منعقد کریں گے تاکہ سعودی عرب میں سرمایہ کاری کے مزید مواقع سے استفادہ کیاجاسکے۔

انہوں نے کہا کہ فرانسیسی سرمایہ کار ماحولیات، پانی، زراعت، مواصلات، بنیادی ڈھانچے،سائنس وٹیکنالوجی اور کئی دوسرے شعبوں میں سرمایہ کاری کرسکتے ہیں۔ایک سوال کے جواب میں ڈاکٹر محمد بن لادن نے کہا کہ فرانس سعودی عرب کا اہم ترین تجارتی اور کاروباری حلیف ہے۔ سعودی عرب میں سرمایہ کاری کرنے والے ممالک میں فرانس کا تیسرا نمبر ہے۔

مزید : بین الاقوامی