چارسدہ ،تاجر تجارتی مراکز سے بجلی منقطع کرنے کیخلاف سراپا احتجاج

چارسدہ ،تاجر تجارتی مراکز سے بجلی منقطع کرنے کیخلاف سراپا احتجاج

  

چارسدہ (بیو رو رپورٹ) واپڈا کی طرف سے تجارتی مراکز سے بجلی منقطع کرنے کے خلاف تاجر برادری سراپا احتجاج بن گئی۔ فاروق اعظم چوک میں احتجاجی مظاہرہ۔ حکومت اور واپڈا کے خلاف شدید نعرہ بازی۔ ٹریفک کا نظام درہم برہم ۔تفصیلات کے مطابق واپڈا محکمہ واپڈا کی طرف سے چارسدہ کے کئی کاروباری مراکز میں بجلی منقطع کرنے کے خلاف تاجر اتحاد کی قیادت میں فاروق اعظم چوک میں احتجاجی مظاہرہ کیا گیا۔ احتجاجی مظاہرین نے صوبائی ، وفاقی اور محکمہ واپڈ ا کے خلاف شدید نعرہ بازی کر تے ہوئے ٹریفک بند کر دی ۔ احتجاجی مظاہرہ سے خطا ب کر تے ہوئے تاجر رہنماوں افتخار حسین صراف , مولانا صلاح الدین شاکر, حبیب ٹیلر, فیاض ، حکیم اللہ فوجی، لعل محمد لعل ، میاں مفرق شاہ ، رحم بادشاہ اور دیگر رہنماوں نے کہا کہ چارسدہ کے مرکزی چوک کے پلازہ کی بجلی عرصہ دراز سے کاٹ دی گئی ہے اور مالکان سے الگ ٹرانسفارمر نصب کرنے کی ہدایت دی گئی ہے مگر اس سے وہاں کے دکاندار براہ راست متاثر ہو رہے ہیں اس کے علاوہ آئے روز ریکوری کے نام پر دکانداروں کی تذلیل کی جارہی ہے جو ہمارے برداشت سے باہر ہے۔انہوں نے اس بات پر افسوس کا اظہا ر کیا کہ پلازوں میں موجود دکانداروں سے بغیر کسی نوٹس کے بجلی کاٹ دی گئی جو سراسر زیادتی ہے ۔انہوں نے منتخب نمائندوں بالحصوص چارسدہ کے ایم این اے فضل محمد خان اور ایم پی اے فضل شکور پر کھڑی تنقید کی اور کہا کہ وہ چارسدہ کے مسائل حل کرنے میں ناکام ہو چکے ہیں۔ ۔ انہوں نے کہا کہ واپڈا حکام پو لیس کے ذریعے دکانداروں کو بیجا تنگ کر رہے ہیں اگر فوری طور پر یہ سلسلہ نہ روکا گیا تو بھرپور احتجاج کریں گے۔ احتجاجی مظاہرین نے بعدازاں مختلف روڈوں پر جلوس بھی نکالا۔بعد ازاں واپڈا حکام اور مظاہرین کے درمیان بات چیت کے نتیجے میں دو فریقی کمیٹی قائم کر دی گئی جو فی الفو ر ان مسائل کا حل نکالے گی جس کے بعد تاجروں نے دھرنا ختم کرنے کا اعلان کیا ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -