تیراہ ،سپا ہ قوم کے متاثرین کو خالی ہاتھ واپس بھیجنا ناانصافی ہے

تیراہ ،سپا ہ قوم کے متاثرین کو خالی ہاتھ واپس بھیجنا ناانصافی ہے

  

باڑہ (نمائندہ پاکستان)تیراہ سپاہ قوم کے متاثرین کو خالی ہاتھ واپس کرنا ان کے قربانیوں کو نظرانداز کرنے کے مترادف ہے ہمارے گھر ، تعلیمی ادارے صحت مراکز تباہ ہو چکے ہیں ۔یہاں تک کی وہاں پر زندگی گزارنے کی کوئی سہولت نہیں ان خیالات کا اظہار قوم سپاہ وادی تیراہ کے مشران نے باڑہ پریس کلب میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے کیا۔اس موقع پر قاضی وارث خان ، حاجی مصری خان ، صاحبزادہ نبی ، حاجی گلاب اور دیگر مشران موجود تھے انہوں نے کہا کہ قبیلہ سپاہ کے متاثرین کو خالی ہاتھ واپس بیج رہا ہے نہ ٹرانسپورٹ نہ کھانے پینے کی بندوبست اور نہ ہی رہائش کیلئے کچھ دیتے ہیں جو کہ قوم سپاہ کے عوام کے ساتھ سوتیلی ماں جیسے سلوک کیا جارہا ہے۔انہوں نے کہا کہ دہشت گردی کے خلاف قبیلہ سپاہ نے پاک فوج کے اپنے ملک کی سلامتی کے خاطر بیش بہا قربانیاں دیئے ہیں،لیکن اب واپسی کے موقع پر قوم سپاہ کے عوام کو خالی ہاتھ واپس بھیجنے سے ہمارے مشکلات کم ہونے کی بجائے مزید بڑھ رہے ہیں تیراہ باڑہ قبیلہ سپاہ کے متاثرین پاک آرمی، ڈپٹی کمشنر خیبر سے مطالبہ کیا ہے کہ تیراہ باڑہ قبیلہ سپاہ کے واپسی کے حوالے سے جو حکومتی اقدامات ہو رہی ہے ان میں قبیلہ سپاہ کے مشران کو اعتماد میں لیکر ان کے غیر موجودگی میں فیصلے ہمیں منظور نہیں ہو گے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -