ملکی اقتصادی بحران کی ذمہ دار آصف زرداری اور حمزہ شہبازکی منی لانڈرنگ : شاہ محمود

ملکی اقتصادی بحران کی ذمہ دار آصف زرداری اور حمزہ شہبازکی منی لانڈرنگ : شاہ ...

  

ملتان،رحیم یار خان(مانیٹرنگ ڈیسک، نیوز ایجنسیان)وفاقی وزیرخارجہ مخدوم شاہ محمودقریشی نے کہا ہے ملک کے حالیہ اقتصادی بحران کی ذ مہ داآصف ر زرداری اور حمزہ شہباز کی منی لانڈرنگ ہے، منی لانڈرنگ کی وجہ سے ہی پاکستان کو گرے لسٹ میں ڈالا گیا، بھارتی جنگی جنون پرعالمی برادری کو حالات کی نزاکت کوسامنے رکھتے ہوئے خاموش تماشائی بننے کی بجائے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا،ہم نے بھارت کا مکردہ چہرہ دنیا کو دکھا دیا ،پاکستان جذبہ خیر سگالی کے تحت 360 بھارتی قیدیوں کو رہا کررہا ہے، دنیا بھارت کے غیر ذمہ درانہ رویہ اور پاکستان کے ذمہ دارانہ رویہ کو تسلیم کررہی ہے۔ پاکستان کل بھی امن کا قائل تھا آج بھی ہے،گزشتہ روز ملتان میں استقبالیہ تقریب ،کوٹ مٹھن اور رحیم یار خا ن میں میڈیا سے گفتگو میں انکا مزید کہنا تھا عالمی طاقتیں پاکستان کو گرے لسٹ سے بلیک لسٹ میں ڈالنے جبکہ حکومت ملک کو بچانے کی کو شش کررہی ہے اور وزارت خارجہ خوش اسلوبی سے اپنے ذمہ داریاں سرانجام دے رہی ہے۔ نیوز ی لینڈ واقعہ کے بعد استنبول میں او آئی سی کے 54مما لک کے اجلاس میں جن 6 نکات پر سفارشات جاری کی گئیں ان میں سے چار نکات میری تقریر کا حصے تھے، ملک کو اقتصادی و معاشی بحران سے نکالنے کی کوششوں کے مثبت اثرات جلد نظر آئیں گے، معیشت مضبوط ہوگی تو نوجوانوں کو روزگار کی فراہمی میں بھی اضافہ ہوگا۔ ملتان کے ضمنی انتخابات میں پی ٹی آئی کیخلاف تمام سیاسی طاقتیں متحد ہو گئیں لیکن اہل ملتان نے تحریک انصاف پر اعتماد کیا ہم ان کے اعتماد پر پورا اتریں گے، ہمارے بھارت کیساتھ کشمیر ، پانی ، سیا چین، سرکریک، راہداریوں اور تجارت کے مسائل ہیں جنہیں گفت وشنید کے ذریعے حل کیا جاسکتا ہے۔ امید ہے بھارت مذاکرات کی اہمیت کو سمجھے گا چاہے الیکشن کے بعد ہی صحیح اگرمل بیٹھنے کو تیار ہے تو ہم بھی تیار ہیں۔ سنجیدہ طبقہ اس بات کی اہمیت اور گہرائی کو سمجھ چکا ہے ۔ میں نے وزیر اعظم سے مشاورت کے بعد فیصلہ کیا کہ تمام حقائق پاکستان اور عالمی برادری کے سامنے رکھے جائیں۔ اگر بھارت پاکستان پر جارحیت کرتا ہے تو ہم قوم کی امنگوں اور بین الاقوامی قوانین کے مطابق جارحیت کا بھرپور جواب دیں گے۔ پلوامہ واقعہ کے بعد بھارت نے مقبوضہ کشمیر میں جبر اور تشددمیں اضافہ کردیا،لوگوں کی آواز کو بیدردی سے کچلا جار ہا ہے ۔ پاکستان نے ماضی میں بھی کشمیریوں کی بھرپور سفارتی ، قانونی و اخلاقی مدد کی تھی اور مستقبل میں بھی جاری رکھے گا۔ میں نے پہلے بھی کہا تھا بھارت جنگی جنون کو ہوا دے رہا ہے اور مودی سرکار اپنے سیاسی مقاصد اور الیکشن میں مقبولیت بڑھانے کیلئے پورے خطے کے امن و استحکام کو داؤپرلگارہی ہے۔موجودہ حکومت کشمیریوں کابھرپور ساتھ دے گی اور کسی کو اس پر حیرت نہیں ہونی چاہیے۔ بھارت نے پاکستان کے حوالے سے جو تین دعوے کیے تھے ان کی قلعی کھل گئی ہے۔ پاکستان کشیدگی کے خاتمے کیلئے حوصلہ اور تدبر کا مظاہرہ کررہا ہے ۔ ہم نے جذبہ خیر سگالی کے تحت بھارتی پائلٹ چھوڑا اور جنگی قیدی رہا کررہے ہیں، بھارت سے بھی اسی جذبے کی توقع رکھتے ہیں۔ ہمارے جذبہ خیر سگالی اور امن کی خواہش کو کمزوری نہ سمجھا جائے۔ عالمی دنیا کو آج باور کروادیا بھارت جنگی جارحیت جیسے اقدامات سے باز رہے۔عالمی برادری کو خطے کی حساسیت کو مد نظر رکھتے ہوئے خاموش نہیں رہناچاہئے بلکہ انہیں اپنا کردار ادا کرنا چاہئے۔ بھارت حملے کی حماقت نہیں کرے گا اگر کسی ایڈوانچر کی کوشش کی تو سخت جواب دیا جائے گا۔عالمی قوانین کے مطابق پاکستان اپنے دفاع کا حق رکھتا ہے۔ نیشنل سکیورٹی کے ایشو پر پاکستان کی حکومت اور اپوزیشن ایک پیج پر ہیں،اپوزیشن کی مجبوریاں سمجھتا ہوں وہ سیاست ضرور کرے مگر یہ وقت متحد رہنے کا ہے۔حمزہ شہباز کا معاملہ عدالت میں ہے اسلئے اس پر بات نہیں کرسکتا۔ ہم نے بھارت کیساتھ کشیدگی کم کرنے کیلئے ہر ممکن قدم اٹھا یا، پاکستان پوری کوشش کر رہا ہے معاملات خراب نہ ہوں، بھارت نئی واردات کے ذریعے پاکستان کیخلاف جارحیت کرنا چاہتا ہے، سفارتی و عسکری سطح پر جارحیت کا منصوبہ بنا رہا ہے، ہمارے پاس بھارت کے عزائم کے حوالے سے ٹھوس خفیہ معلومات ہیں۔

شاہ محمود

مزید :

صفحہ اول -