وہوا ‘ 7 سالہ بچی سے بداخلاقی ‘ ملزم ڈیرہ اسماعیل خان سے گرفتار ‘ تفتیش شروع

وہوا ‘ 7 سالہ بچی سے بداخلاقی ‘ ملزم ڈیرہ اسماعیل خان سے گرفتار ‘ تفتیش شروع

  

ڈیرہ غازیخان‘وہوا(نمائندہ خصوصی ‘ نمائندہ پاکستان ‘ سٹی رپورٹر)ڈی جی خان کی تحصیل تونسہ شریف کے تھانہ وہوا میں 7 سالہ بچی مہرین سے بداخلاقی کے ملزم کو 24 گھنٹے کے اندر تھانہ وہوا پولیس نے صوبہ خیبر پختونخواہ سے گرفتار کرلیا تفصیلات کے مطابق تھانہ وہوا میں 7 سالہ بچی مہرین بی بی کے والد نے اطلاع دی کہ اس کے اپنے ہی رشتہ دار یونس ولد بشیر احمد قوم دستی نے میری بچی مہرین بی بی سے بداخلاقی کی ہے جس کی اطلاع پر ڈی پی او (بقیہ نمبر28صفحہ7پر )

عاطف نذیر نے نوٹس لیتے ہوئے فرار ہونے والے ملزم کی گرفتاری کے فی الفور احکامات دیئے ڈی ایس پی تونسہ سادات علی کی نگرانی میں ایس ایچ او تھانہ وہوا، پکٹ لکھانی پر تعینات ہیڈ کانسٹیبل کی خصوصی کاوشوں سے فرار ہونے والے بداخلاقی کے ملزم یونس کو ضلع ڈیرہ اسماعیل خان سے 24 گھنٹے کے اندر گرفتار کر لیا ڈی ایس پی تونسہ سادات علی نے کہا کہ ہماری ہر کاوش عوام الناس کا تحفظ ہے مجرم کبھی بھی قانون کی گرفت سے بچ نہیں سکتا انہوں نے کہا کہ ڈی پی او عاطف نذیر کے احکامات کی روشنی میں ہم نے فرار ہونے والے اس درندہ کو 24 گھنٹے کے اندر گرفتار کر لیا ہے ڈی ایس پی نے کہا کہ ملزم سے مزید تفتیش جاری ہے اور انشاء اللہ ہمارے ہوتے ہوئے انصاف کا بول بالا ہو گا ڈی پی او عاطف نذیر نے ملزم کی گرفتاری ہونے پر تمام ٹیم جو اس مشن میں شامل تھی کی کاوش کو سہراتے ہوئے تعریفی سرٹیفکیٹ اور نقد انعام کا اعلان کیا ہے۔

بچی بداخلاقی کیس

مزید :

ملتان صفحہ آخر -