چیک ریپبلک کا وفد تجارت و سرمایہ کاری کیلئے جلد پاکستان کا دورہ کریگا : سفیر

چیک ریپبلک کا وفد تجارت و سرمایہ کاری کیلئے جلد پاکستان کا دورہ کریگا : سفیر

  

لاہور(کامرس ڈیسک) چیک ریپبلک کے کمرشل اتاشی مائیکل بوبیک نے لاہور چیمبر کے نائب صدر فہیم الرحمن سہگل سے ملاقات میں بتایا ہے کہ جلد ہی چیک ریپبلک کا ایک اعلی سطحی وفد وزیر تجارت کے ہمراہ تجارت و سرمایہ کاری کے مواقعوں اور مشترکہ منصوبہ سازی کے امکانات کا جائزہ لینے کے لیے پاکستان کا دورہ کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ ایک دہائی سے زیادہ عرصہ گزرنے کے بعد اعلیٰ سطحی وفد پاکستان کا دورہ کررہا ہے۔ دونوں ممالک کے تاجروں کے درمیان مضبوط رابطے باہمی تجارت کا حجم بڑھانے میں اہم کردار ادا کرسکتے ہیں، چیک ریپبلک کے تاجر پاکستانی تاجروں کے ساتھ مشترکہ منصوبہ سازی کرنا چاہتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں چیک ریپبلک کا سفارتخانہ پاکستانی تاجروں کے ساتھ ہر ممکن تعاون کرے گا۔ انہوں نے کہا کہ الیکٹریکل مصنوعات، ٹرانسفارمرز، جنریٹرز ، بھاری وہیکلز، کیمیکلز اور ٹیکنیکل ایجوکیشن کے شعبوں میں چیک ریپبلک کی مہارت پاکستان کے لیے مددگار ثابت ہوسکتی ہے۔ لاہور چیمبر کے نائب صدر فہیم الرحمن سہگل نے کہا کہ چیک ریپبلک یورپین یونین کا اہم ملک ہے، پاکستانی تاجر وہاں تجارت و سرمایہ کاری کے مواقعوں سے فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ موجودہ تجارتی حجم میں کئی گنا اضافے کی گنجائش ہے۔ 2018ء میں باہمی تجارت کا حجم 89ملین ڈالر تھا، پاکستان چیک ریپبلک کو گارمنٹس، بیڈ لینن، لیدر گارمنٹس، وون فیبرک اور کاٹن وغیرہ درآمد جبکہ وہاں سے ٹیکسٹائل مشینری، کاغذ، پیپر بورڈ اور سائنسی آلات وغیرہ درآمد کرتا ہے۔ انہوں نے کہا کہ چیک ریپبلک کی مجموعی تجارت میں پاکستان کا حصہ بہت کم ہے جسے بڑھانے کی ضرورت ہے، دونوں ممالک کے چیمبروں میں روابط اور تجارتی وفود کا تبادلہ اس سلسلے میں اہم کردار ادا کرسکتا ہے۔

اجلاس میں چیک ریپبلک کے اعزازی قونصلرڈاکٹر کمال منوں، لاہور چیمبر کے ایگزیکٹو کمیٹی اراکین میاں زاہد جاوید اور ادیب اقبال شیخ بھی موجود تھے۔

مزید :

کامرس -