نئے قبائلی اضلاع کے ترقیاتی منصوبے مشران کی مشاور سے شروع کرینگے: اکبر ایوب خان

نئے قبائلی اضلاع کے ترقیاتی منصوبے مشران کی مشاور سے شروع کرینگے: اکبر ایوب ...

  

پشاور( سٹاف رپورٹر)خیبر پختونخوا کے وزیر برائے مواصلات و تعمیرات اکبر ایوب خان نے وزیراعلی محمود خان کی خصوصی ہدایت پر بنوں ڈویژن کا دورہ کیا۔دورہ کے موقع پر نئے ضم شدہ ضلع شمالی وزیرستان کے مشران سے خطاب کرتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ نئے ضم شدہ قبائلی اضلاع میں جتنے بھی ترقیاتی کام ہو نگے وہ قبائلی اضلاع کے مشران اور نمائندوں کی مشاورت سے کیے جائیں گے اکبرایوب خان نے کہا کہ موجودہ صوبائی اور وفاقی حکومتیں قبائلی اضلاع کی ترقی کے لئے اقدامات اٹھارہی ہیں ۔ معمول کے سالانہ ترقیاتی پروگرام کے علاوہ ضم شدہ اضلاع کو سالانہ100 ارب روپے ملیں گے جس سے ان اضلاع میں ترقی کا عمل تیز ہوجائے گا۔ دورے کے موقع پر چیف انجینئر C&W ایوب خان، اسسٹنٹ کمشنر بنوں ، چیف کمشنر رائٹ ٹو سروسز کمیشن مشتاق جدون, صوبائی ممبر شاہ محمد خان،صوبائی ممبر پختون یار خان اور دیگر حکام بھی موجود تھے۔قبائلی مشران نے صوبائی وزیر کو نئے ضم شدہ ضلع میں صحت، تعلیم،پانی،فنڈز، سڑکوں اور دیگر شعبوں میں درپیش مسائل سے آگاہ کیا۔ اکبر ایوب خان نے کہا کہ قبائلی اضلاع کی ترقی اور خوشحالی کے لیے وزیراعظم پاکستان عمران خان بھر پور کوشش کر رہے ہیں اور وہ دن دور نہیں جب یہ سارے اضلاع پاکستان کے دوسرے صوبوں کے اضلاع کے ساتھ ایک ہی صف میں کھڑے ہوں گے اکبر ایوب خان نے کہا کہ دس سالہ ترقیاتی پروگرام کے تحت جتنے بھی منصوبے شروع کئے جائیں گے ان سے تمام قبائلی اضلاع میں مواصلات، تعلیم، صحت اور دیگر شعبوں میں نمایاں بہتری آئے گی جس سے ان اضلاع سے تعلق رکھنے والے لوگوں کی محرومیوں کا ازالہ ہوگا۔اکبر ایوب خان نے کہا کہ ان سب کے لیے فنڈز کا صحیح استعمال بہت ضروری ہے جو کہ آپ لوگوں کے مشاورت سے ہی ممکن ہو سکتا ہے۔صوبائی وزیر نے پشاور ہائی کورٹ بنوں بینچ کے نئے زیر تعمیر عمارت کا دورہ بھی کیا اور وہاں پر جاری کام کا جائزہ لیا گیا۔

مزید :

صفحہ اول -