ڈایفنس میں 2 افراد کے قتل کا مقدمہ سرکاری مدعیت میں درج

ڈایفنس میں 2 افراد کے قتل کا مقدمہ سرکاری مدعیت میں درج

  

کراچی (کرائم رپورٹر) کراچی کے علاقے ڈیفنس میں فائرنگ کے نتیجے میں پولیس اہلکار سمیت 2 افراد کے قتل کا مقدمہ درخشاں تھانے میں درج کرلیا گیاہے جبکہ پولیس نے دومزیدملزمان کو گرفتارکرلیاہے۔پولیس کے مطابق ڈیفنس خیابان بخاری میں فائرنگ کا مقدمہ سرکار کی مدعیت میں درخشاں تھانے میں درج کرلیا گیا ہے۔مقدمے میں انسدادِ ہشت گردی اور قتل کی دفعات شامل کی گئی ہیں، مقدمہ فائرنگ کرنے والے مرکزی ملزم سمیت 5افراد کے خلاف درج کیا گیا۔ایف آئی آر کے مطابق فائرنگ کرنے والا شخص ویگو گاڑی میں سوار تھا اور گاڑی کے پیچھے ایک نیلی رنگ کی کلٹس گاڑی بھی موجود تھی جس میں 3 مسلح افراد سوار تھے، جبکہ ملزمان کے ساتھ موٹر سائیکل پر بھی مسلح شخص موجود تھا۔دوسری جانب پولیس نے واقعے کے مرکزی ملزم نذیر کے 2 دوستوں کو حراست میں لے لیا ہے۔پولیس کے مطابق زیرِحراست افرادسے تفتیش کی جا رہی ہے جبکہ ان کا موبائل ریکارڈ بھی نکالا جا رہا ہے۔پولیس کے مطابق فائرنگ کے مقام سے تمام شواہد اکھٹے کر لئے گئے ہیں، واقعے میں نائن ایم ایم پستول استعمال کی گئی تھی۔پولیس کے مطابق سی ڈی آر سے نذیر کے ساتھ موجود دیگر افراد سے متعلق پتہ لگایا جائے گا، ملزم نذیر ہفتے کی رات 10 بجے اپنے دوستوں سے کلفٹن میں ملا تھا۔پولیس نے بتایاکہ ملزم نذیر اور اس کے دوستوں نے کلفٹن کے علاقے میں نشہ کیا، یہ ملزمان کلفٹن سے رات ڈھائی بجے نشے کی حالت میں روانہ ہوئے، نذیر کے ساتھ حسن اور بلال کے علاوہ دیگر 2 دوست بھی تھے۔پولیس کے مطابق زیرِ حراست میاں حسن اور بلال رات ڈھائی بجے تک نذیر کے ساتھ تھے، جبکہ فائرنگ کا واقعہ ہفتے کی رات تقریبا سوا تین بجے پیش آیا، نذیر کے ایک دوست سے متعلق تحقیقات کی جا رہی ہے۔پولیس نے بتایا ہے کہ واقعے کے وقت موجود ڈبل کیبن گاڑی پر لگے اسٹیکر سے متعلق معلومات بھی حاصل کی جا رہی ہیں، تفتیش کی جا رہی ہے کہ گاڑی پر لگا اسٹیکر جعلی تو نہیں۔پولیس نے بتایاکہ ملزم نذیر کے ساتھی ڈیفنس اور گلستان جوہر کے رہائشی ہیں، ملزم نذیر کا تعلق دالبندین سے ہے، جو آئس کا نشہ کرتا ہے۔

مزید :

راولپنڈی صفحہ آخر -