لاہور ہائیکورٹ نے ناصر جمشید کو بڑی خوشخبری سنا دی

لاہور ہائیکورٹ نے ناصر جمشید کو بڑی خوشخبری سنا دی
لاہور ہائیکورٹ نے ناصر جمشید کو بڑی خوشخبری سنا دی

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور ہائیکورٹ نے سپاٹ فکسنگ میں سزایافتہ کرکٹر ناصر جمشید کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کا حکم دیدیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق لاہور ہائیکورٹ میں سابق کرکٹر ناصر جمشید کا نام ای سی ایل سے نکالنے کیلئے دائر درخواست کی سماعت ہوئی۔ درخواست گزار کی جانب سے موقف اپنایا گیا کہ سپاٹ فکسنگ میں سزاءکے بعد ناصر جمشید کا نام ای سی ایل میں ڈالا گیا، غیر قانونی طور پر ای سی ایل میں نام شامل کر کے قانون کی خلاف ورزی کی گئی۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل نے وزارت داخلہ کی جانب سے جواب دیتے ہوئے کہا کہ ایف آئی اے کی سفارش پر نام ای سی ایل میں ڈالا۔ وکیل ایف آئی اے نے دلائل میں کہا کہ ای سی ایل میں نام ڈالنا وزارت داخلہ کا اختیار ہے، ناصر جمشید کی کوئی انکوائری ایف آئی اے کے پاس زیرالتواءنہیں ہے۔

عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد سپاٹ فکسنگ میں سزا یافتہ کرکٹر ناصر جمشید کا نام ای سی ایل سے نکالنے کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ ناصر جمشید کو سپاٹ فکسنگ سکینڈل میں پابندی کی سزا ملنے کے بعد ان کا نام ای سی ایل میں ڈالنا غیر قانونی ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کرکٹ بورڈ (پی سی بی) کے 3 رکنی اینٹی کرپشن ٹربیونل نے سپاٹ فکسنگ کیس کا فیصلہ سناتے ہوئے ناصر جمشید پر ایک سال کی پابندی عائد کی تھی۔

مزید :

کھیل -