ماسٹر کارڈ کا مشرق وسطیٰ اور افریقہ ریجن میں کانٹیکٹ لیس ادائیگیوں کی حد بڑھائیگا

  ماسٹر کارڈ کا مشرق وسطیٰ اور افریقہ ریجن میں کانٹیکٹ لیس ادائیگیوں کی حد ...

  

لاہور (اسٹاف رپورٹر) ماسٹر کارڈ نے کورونا وائرس کی وباء کے دوران لوگوں کو ادائیگیوں کے محفوظ طریقہ کار کے سلسلے میں مشرق وسطیٰ اور افریقی خطے میں کانٹیکٹ لیس ادائیگیوں کی حد میں اضافے کی اپنی کاوشوں کا اعلان کیا ہے۔یہ اقدام عالمی و علاقائی ہیلتھ اتھارٹیز اور حکومتوں کی جانب سے کوورنا وائرس کے باعث سماجی فاصلے برقرار رکھنے کی سفارشات کے تناظر میں اٹھایا گیا ہے تا کہ مرچنٹس کی زیادہ سے زیادہ تعداد کو کانٹیکٹ لیس ادائیگیوں کی ترغیب دی جاسکے۔۔مشرق وسطیٰ و افریقہ میں ماسٹر کارڈ نے کارڈ ہولڈرز کو ادائیگیوں کے محفوظ،تیز اور آسان تجربات سے ہم آہنگ کرنے کی کاوشوں کے طور پر مختلف مارکیٹس میں ڈیجیٹل و کانٹیکٹ لیس ادائیگیوں کی ٹیکنالوجی کے استعمال میں اضافے کی غرض سے مختلف صنعتی شراکت داروں کے ساتھ کام کیا۔ سال2019 کے دورا ن مشرق وسطیٰ و افریقی خطے میں کانٹیکٹ لیس ٹرانزیکشنز میں 200 فیصد سے زائد کا اضافہ دیکھا گیا۔آج مشرق وسطیٰ و افریقہ میں 9میں سے 1ماسٹر کارڈ ٹرانزیکشنز پوائنٹ آف سیل ٹرمینلزکانٹیکٹ لیس ہیں۔سعودی عرب،قطر،بحرین اور مصر میں پہلے ہی مرکزی بینک کارڈ ہولڈر ویری فکیشن میتھڈ لمٹ (سی وی ایم) میں اضافہ کرچکے ہیں۔

مزید :

کامرس -