ود ہولڈنگ ٹیکس کے خاتمے اور فکس ٹیکس کے نفاذ سے پراپرٹی بحران حل ہونے میں مدد ملے گی: بلڈرز ڈویلپرز

  ود ہولڈنگ ٹیکس کے خاتمے اور فکس ٹیکس کے نفاذ سے پراپرٹی بحران حل ہونے میں ...

  

لاہور (رپورٹ،میاں اشفاق انجم،تصاویر:ایوب بشیر)تعمیراتی شعبہ کو صنعت کا درجہ دینا بڑا اقدام ہے۔رئیل اسٹیٹ سیکٹر کوبھی صنعت کا درجہ دیاجائے۔ودہولڈنگ ٹیکس کے خاتمے اور فکس ٹیکس کے نفاذ سے پراپرٹی بحران کے حل میں مدد ملے گی۔45دنوں میں ہاؤسنگ سکیم اور گھر بنانے کی منظوری پر عمل درآمد ہوگیا تو تعمیراتی شعبہ سے منسلک دو درجن انڈسٹریزخود بہ خود چل جائیں گی۔گھر کے ساتھ پلاٹ خریدنے کیلئے بھی ایمنسٹی دی جائے۔تعمیراتی پیکیج سمیت سی وی ٹی اور اسٹام ڈیوٹی دو فیصد کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے۔14اپریل سے رئیل اسٹیٹ سیکٹر اور تعمیراتی شعبہ کو کھول دیاجائے تعمیراتی پیکیج پر عملدرآمد سے ملکی معیشت پٹڑی پر چڑھ جائے گی۔ سینئر بلڈر،ڈویلپرز،رئیل اسٹیٹ ایجنٹس کی طرف سے بھرپور خیر مقدم۔چیئرمین ڈی ایچ اے اسٹیٹ ایجنٹس ایسوسی ایشن آصف جہانگیر،سابق سینئر نائب صدر کرنل محمد صدیق، بحریہ ٹاؤن کے مجاہد قادری، جوہر ٹاؤن کے احسان چوہدری، ندیم اختر، طیب پیر زادہ،زبیر شیخ،آصف شیخ سیکرٹری اطلاعات ڈی ایچ اے لاہور علی اکبر بھٹی،منورحسین،چوہدری اسعد،وائس چیئرمین ڈی ایچ اے رانا جاوید،میاں طارق منیر، راشد خان،میاں فاروق، عاطف اعجاز،سنٹرل پارک کے میاں فیاض سعید کی روز نامہ پاکستان سے خصوصی گفتگو میں اظہار خیال۔آصف جہانگیر نے تعمیراتی پیکیج کو رئیل اسٹیٹ کیلئے بریک تھرو پیکیج قرار دیاہے۔کرنل صدیق نے کہا ہے دیر آید درست آید۔مجاہد قادری نے وزیر اعظم کا تاریخی اقدام قرار دیتے ہوئے ملکی معیشت کی مضبوطی کی طرف مضبوط قدم قرار دیا ہے۔احسان چودھری نے رئیل اسٹیٹ کو بھی صنعت کا درجہ دینے کامطالبہ کیا ہے۔ندیم اختر نے سریا، سیمنٹ پر بھی ٹیکس حتم کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔طیب پیر زادہ اور آصف شیخ نے تحریک انصاف کی حکومت کا بڑا اقدام قرار دیا ہے۔علی اکبر بھٹی نے کہا مثبت اثرات مرتب ہوں گے ہزاروں لوگو ں کو روزگار ملے گا۔منور حسین نے کہا گھر بنانے سے پہلے پلاٹ کا حصول ضروری ہے گھر کے ساتھ پلاٹس خریدنے پر بھی ایمنسٹی دی جائے۔چوہدری اسعد،رانا جاوید نے کہا ہے وزیر اعظم کے تعمیراتی پیکیج سے 50لاکھ گھروں کا خواب پورا ہوتا نظر آرہا ہے۔میاں فاروق اور زبیر شیخ نے 2016ء کو مسلط کیے گیے ٹیکسز واپس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔راشد خان،میاں طارق منیر،عاطف اعجاز نے CVTاور اسٹام ڈیوٹی ڈو فیصد کرنے کے نو ٹیفکیشن فوری جاری کرنے کا مطالبہ کیا ہے۔میاں فیاض سعید نے کہا ہے گین ٹیکس کی میعاد پلاٹس کیلئے بھی 8سال سے کم کرکے 3سال کی جائے۔

بلڈرز

مزید :

صفحہ آخر -