سکندر یہ کالونی میں ایک ہی گھر کے 9افراد کرونا کا شکار، پورا علاقہ سیل، جناح اور میو ہسپتال میں 2مریض جاں بحق

سکندر یہ کالونی میں ایک ہی گھر کے 9افراد کرونا کا شکار، پورا علاقہ سیل، جناح ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر)سوڈیوال سکندریہ کالونی میں ایک ہی گھر کے اندر 9افراد کرو نا پازیٹو آنے پرپورا علاقہ سیل کردیا گیا۔ محکمہ صحت، ضلعی انتظامیہ اور پولیس نے سکندریہ کالونی کے ایک گھر میں پورا کنبہ کرونا پازیٹیو آنے کے بعد فوری ایکشن لیا اور ایک گھر کے 9افراد اور ان کے ایک ہمسایہ کو اپنی تحویل میں لے لیا اور انہیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کر دیا اور پوری کالونی کو سیل کر دیا ہے جبکہ میو ہسپتال میں کرونا کی شکار 32 سالہ مریضہ دم توڑ گئی ہے جو پہلے ہی گردوں کے عارضے میں مبتلا تھی۔مریضہ کو 3اپریل کو میو ہسپتال لایا گیا جہاں اس نے تحریری طور پر کہا کہ وہ گردوں کے ڈائیلسز نہیں کروانا چاہتی۔ سی ای او میو ہسپتال اسد اسلم کے مطابق مریضہ نے گردوں کا ڈائیلسز کروانے سے انکار کیا جو موت کا سبب بنا۔مریضہ کی ہلاکت کے بعد میو ہسپتال میں کرونا وائرس سے مرنے والوں کی تعداد 9 ہو گئی ہے۔دوسری جانب گھر میں رہیں، محفوظ رہیں کی خلاف ورزی سے موذی کروناوائرس لاہور میں تیزی سے پھیلنے لگا ہے۔ لاہورمیں کرونا کے مزید 12کیس سامنے آ گئے ہیں جس سے شہر میں مصدقہ کرونا مریضوں کی تعداد 340 ہو گئی جبکہ صوبہ بھرمیں 2 ہزار 108افراد موذی وائرس میں مبتلا ہیں۔ جناح ہسپتال میں 44سالہ مریض کی موت کے بعد شہر میں ہلاکتوں کی تعداد10 ہو چکی ہے۔ گزشتہ روزصوبہ بھرمیں 78مریضوں کے کرونا ٹیسٹ پازیٹو آئے ہیں۔جبکہ شہرکے 2 ہسپتالوں سے کرونا کے 12نئے مریض صحت یاب ہو گئے ہیں جس کے بعد لاہور میں کرونا سے صحت یاب ہونے والے مریضوں کی تعداد46ہو گئی ہے۔

نوافراد

مزید :

صفحہ اول -