نوشہرہ، کورونا وائرس بارے علمائے کی بے عزتی برداشت نہیں کی جائیگی: قاری محمد اسلم

نوشہرہ، کورونا وائرس بارے علمائے کی بے عزتی برداشت نہیں کی جائیگی: قاری محمد ...

  

نوشہرہ (بیورورپورٹ)کرونا وائرس ضلعی انتظامیہ سے تعاون جاری رہے گا. علماء کی بیعزتی برداشت نہیں کی جائے گی. جمعیت علماء جمعیت علماء اسلام ضلع نوشہرہ کے زیراہتمام ضلع بھر کے علماء کرام اور آئمہ مساجد کا بھرپور اجلاس زیر صدارت قاری محمد اسلم حقانی گزشتہ روز جامع مسجد نوشہرہ میں منعقد ہوا. اجلاس کا ایجنڈا عالمی وبا کرونا وائرس سے پیدا شدہ صورتحال اور گزشتہ رات ضلعی امیر قاری محمداسلم صاحب کے ساتھ نوشہرہ پولیس کی جانب سے پیش آنے والا واقعہ تھا. اجلاس سے ضلعی جنرل سیکرٹری مفتی حاکم علی حقانی نے کہا کہ سب سے پہلے جمعیت علماء اسلام ضلع نوشہرہ ملک کے مختلف علاقوں میں تبلیغی حضرات کے ساتھ حکومتی اہلکاروں کی ناروا سلوک اور روئیے اور گزشتہ رات علماء کے امیر قاری محمد اسلم کے ساتھ پیش آنے والے واقعہ کی شدید الفاظ میں مذمت کرتے ہیں. انہوں نے کہا کہ ایک سوچی سمجھی سازش کے تحت تبلیغ سے وابستہ ملک کے انتہائی پرامن لوگوں کے خلاف ایسا رویہ اختیار کیا گیا. مساجد پر پابندیوں سے وبائیں ختم نہیں بلکہ پھیلتی ہیں. اسکے باوجود ہم اپنے قائد کے حکم پر ضلعی اسسٹنٹ کمشنر شاہد علی خان صاحب سے ملاقات کی اور ہر ممکن تعاون کا یقین دلایا. اور 100 باوردی رضاکاروں کی خدمات پیش کی.اور واضح کیا کہ کرونا وائرس کی پاکستان میں علامات ظاہر ہوتے ہی قائدجمعیت حضرت مولانا فضل الرحمن مدظلہ نے تمام جماعتی سرگرمیاں معطل کردی اور تمام مقامی جماعتوں کو ہدایت کی کہ اپنے اضلاع کے انتظامیہ کے ساتھ بھرپور تعاون کریں.لیکن اسکے چند روز بعد ہمارے ضلعی امیر کے ساتھ پیش آنے والا واقعہ سمجھ سے بالاتر ہے. انہوں نے کہا کہ اب بھی ہم اپنے قائد کے حکم کے پابند ہیں اور انکی ہدایت کے مطابق ضلعی انتظامیہ سے تعاون جاری رکھیں گے. اجلاس سے ضلعی امیر قاری محمداسلم حقانی نے خطاب کرتے ہوئے کہا واقعہ ناقابل برداشت تھا اور نوشہرہ کے کارکنوں اور نوشہرہ کینٹ کے عوام کی آدھی رات کو تھانے کے باہر جمع ہونا اور ضلعی قائدین کی کوششوں سے معاملہ رفع دفع ہوا. ضلعی انتظامیہ کی طرف سے بار بار معذرت اور آپ تمام ساتھیوں کی مشاورت سے ہم نے معذرت قبول کرلی لیکن یہ واضح کرنا چاہتے ہیں کہ پابندی کی آڑ میں کسی بھی امام مسجد کی بیعزتی برداشت نہیں کی جائے گی. اجلاس کے آخر میں جامع مسجد کے خطیب قاضی خلیل الرحمٰن صاحب نے اختتامی دعا فرمائی.۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -