ایک مرتبہ پھر پیسہ جیت گیا، کورونا وائرس کے خلاف موثر سمجھی جانے والی دوا کی برآمد پر پابندی ہٹا دی گئی، سٹاک ملک سے باہر بھیجنے کی تیاری، پاکستانی ایک دوسرے کی شکلیں دیکھنے لگے  

ایک مرتبہ پھر پیسہ جیت گیا، کورونا وائرس کے خلاف موثر سمجھی جانے والی دوا کی ...
ایک مرتبہ پھر پیسہ جیت گیا، کورونا وائرس کے خلاف موثر سمجھی جانے والی دوا کی برآمد پر پابندی ہٹا دی گئی، سٹاک ملک سے باہر بھیجنے کی تیاری، پاکستانی ایک دوسرے کی شکلیں دیکھنے لگے  

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن) ایک مرتبہ پھر پیسہ جیت گیا، کورونا وائرس کے خلاف موثر سمجھی جانے والی دوا کی برآمد پر پابندی ہٹا دی گئی، سٹاک ملک سے باہر بھیجنے کی تیاری، پاکستانی ایک دوسرے کی شکلیں دیکھنے لگے۔

سینئر صحافی فرقان صدیقی کا کہنا ہے کہ پاکستان نے کورونا وائرس کے خلاف موثر سمجھی جانے والی دوا ریسوچن اور ایچ سی کیو دوسو کی برآمد پر سے پابندی ہٹا دی گئی ہے۔ انہوں نے بتایا ہے کہ اس سے قبل اس دوا کا بڑا سٹاک فروری دوہزار بیس میں چین برآمد کیاگیا تھا اس کے بعد اس پر پابندی عائد کردی گئی تھی تاہم اب ایک بار پھر حکومت پاکستان نے ان ادویات کی برآمد پر پابندی ختم کردی گئی ہے تاکہ مکمل سٹاک کو امریکا برآمد کردیاجائے۔

انہوں نے اپنا ایک پرانا ٹویٹ شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ وہ چوبیس مارچ کو بھی اس بارے میں بات کرچکے ہیں جب انہوں نے کہا تھا کہ جرمنی اور امریکا پوری کوشش کررہے ہیں کہ کلوروکین فاسفیٹ کو پاکستان سے خرید لیا جائے تاہم اس کو حکومتی اجازت سے مشروط کردیاگیاہے۔

خیال رہے کہ کلوروکین کو کورونا وائرس کے خلاف موثر دوا سمجھا جا رہاہے اور یہاں پاکستان میں بھی کورونا وائرس تیزی سے پھیل رہا ہے۔ گزشتہ روز امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ نے بھارت کو بھی یہ دوا برآمد نہ کرنے پر جوابی کارروائی کی دھمکی دی تھی جس کے بعد بھارت نے دواکی برآمد کی اجازت دے دی ہے۔

مزید :

قومی -کورونا وائرس -