کورونا وائرس کے باعث اہم ترین شعبے نے حکومت سے ٹیکس چھوٹ سے اربوں روپے کا ریلیف مانگ لیا

کورونا وائرس کے باعث اہم ترین شعبے نے حکومت سے ٹیکس چھوٹ سے اربوں روپے کا ...
کورونا وائرس کے باعث اہم ترین شعبے نے حکومت سے ٹیکس چھوٹ سے اربوں روپے کا ریلیف مانگ لیا

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن )کورونا وائرس کے باعث ٹیلی کام سیکٹر بھی متاثر ہورہا ہے،حکومت سے ٹیکس چھوٹ کے ذریعے اربوں روپے ریلیف کا مطالبہ کردیا۔پاکستان میں کام کرنے والی سیلولر کمپنیوں کے سی ای اوز نے وزارت آئی ٹی اور پی ٹی اے کو خط لکھا ہے۔ مراسلے میں لکھا ہے کہ ٹیلی کام سیکٹر سے یونیورسل سروسز کی مد میں 100 ارب روپے سالانہ ٹیکس لیا جاتا ہے،حکومت اس میں 50 فیصد کمی کرے۔اس کے علاوہ موبائل فون کارڈ ری چارج پر16 فیصد فیڈرل ایکسائز ڈیوٹی ختم کرنےکیساتھ انٹرنیٹ ڈیٹا پر ٹیکس معطل کرنے کا بھی مطالبہ کیا گیا۔

خط میں پی ٹی اے سے سالانہ ریگولیٹری ڈیوٹیز میں 50 فیصد چھوٹ کی بھی اپیل کی گئی۔ ٹیلی کام کمپنیوں نے آزاد کشمیرمیں تھری جی اور فورجی سروسز فراہمی کی اجازت بھی مانگ لی۔خط میں یہ مطالبہ بھی کیا گیا ہے کہ نادرا ٹیلی کام کمپنیوں سے فی شناختی کارڈ 23 روپے بائیومیٹرک تصدیقی چارجز ختم کرے۔

مزید :

قومی -