امریکی عہدیدار کا 15سال میں پہلی باردورہ گوادر 

  امریکی عہدیدار کا 15سال میں پہلی باردورہ گوادر 

  

اسلام آباد (سٹاف رپورٹر،نیوز ایجنسیاں) پاکستان میں امریکی سفارتخانے کی ناظم الامور انجیلا اگیلر نے جمعرات کو گوادر کا دورہ کیا، وہ 15سال کے عر صے میں گوادر کا دورہ کرنیوالی پہلی امریکی عہدیدار ہیں اور یہ ان کا بلوچستان کا دوسرا دورا تھا ایگلر نے اس موقع پر میری ٹائم سکیورٹی کے حوا لے سے پاک امریکہ تعاون، امریکہ اور بلوچستان کے درمیان تجارتی و اقتصادی تعلقات میں اضافے اور بلوچستان میں خوشحالی کے فروغ کے حوالے سے امور پر روشنی ڈالی۔دوسری طرف پاکستان کسٹمز نے چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت قائم گوادر فر ی زون میں کارگو کلیرنس کا آغاز کر تے ہوئے ایچ کے سن کارپوریشن کی کنسائنمنٹ کو کلیر کر دیا۔ درآمد ہونیوالی کنسائنمنٹ کو مینو فیکچرنگ کے بعد دوبار ہ پاکستان سے برآمد کیا جائیگا۔ ایف بی آرکے ترجمان نے بدھ کوبتایا پہلی کنساینمنٹ جو میٹل سکریپ پر مشتمل تھی اسے ماڈل کسٹمز کولیکٹوریٹ اے اینڈ ایف ویسٹ کراچی نے پرا سیس اور کلیر کیا۔ بعد ازاں اشیا ء گوادر فری زون پہنچ گئیں جو ماڈل کسٹمز کولیکٹوریٹ گوادر ریگولیٹ کرتا ہے۔ ایچ کے سن کارپوریشن کی مزید کنسائنمنٹ پاکستان پہنچ رہی ہے جو اشیا ء کی پیداوار میں استعمال ہو گی اور پھر پاکستان سے برآمد ہو گی۔ترجمان نے بتایا ایچ کے سن کارپوریشن پہلی انٹر پرائز ہے جس نے گوادر فری زون میں پیداوار اور پراسیسنگ شروع کی ہے۔ اس کے علاوہ مزید کئی انٹرپرائزز جلد ہی سی پیک کے تحت گوادر فری زون میں کام کا آغاز کر دیں گی۔معاہدے کے تحت گوادر فری زون کی ترقی اور آپریشن کو چائنہ اوورسیز پورٹس ہولڈنگ کمپنی چلا رہی ہے۔ فری زون کو منصوبے کے تحت چار فیز میں 2015ء سے 2030ء تک ڈیویلپ کیا جائیگا۔ فری زون کی بدولت پاکستانی اور چینی صنعتوں کے درمیان روابط پیدا ہونگے۔ گوادر فری زون روزگار مہیا اور ملکی معاشی ترقی میں کلیدی کردار ادا کریگا۔ترجمان نے کہا فیڈرل بورڈ آ ف ریونیو گوادر فری زون میں مزید سہولیات فراہم کرنے، برآمدات و تجارت کو بڑھانے میں ہمہ وقت کوشاں ہے۔

پہلا دورہ گوادر 

مزید :

صفحہ آخر -