نواز شریف کی بریت کیخلاف اپیل جلد سننے کا کوئی جواز نہیں، اسلام آباد ہائیکورٹ

  نواز شریف کی بریت کیخلاف اپیل جلد سننے کا کوئی جواز نہیں، اسلام آباد ...

  

 اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) اسلام آباد ہائیکورٹ نے نواز شریف،مریم نواز اور کیپٹن (ر) صفدر اعوان کی اپیلیں جلد مقرر کرنے کی درخوا ست پر کرمنل اپیلیں مقرر کرنے اور اپیلوں کے اسٹیٹس کی رپورٹ طلب کرلی۔جسٹس عامر فاروق کی سربراہی میں دو رکنی بینچ نے کیس پر سما عت کی۔ نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر عباسی عدالت کے سامنے پیش ہوئے۔ نیب پر ا سیکیوٹر نے کہاایون فیلڈ ریفرنس،العزیزیہ ریفرنس، فلیگ شپ ریفرنس سماعت جلد مقرر کرنے کی درخواست دی۔ اسلام آباد ہائی کورٹ نے کہارجسٹرار آفس کی رپورٹ آجائے پھر دیکھ لیتے ہیں،عدالت نے رجسٹرار آفس سے 13 اپریل تک رپورٹ طلب کر لی۔ عدالت نے کہارجسٹرار آفس بتائے کورونا کے دوران کرمنل اپیلیں سننے کی پالیسی،اپیلوں کا سٹیٹس کیا ہے؟۔اسلام آباد ہائی کورٹ نے ریمارکس دیئے کہ سابق وزیر اعظم نواز شریف کی بریت کیخلاف نیب اپیل جلد سننے کا کوئی جواز نہیں،تمام اپیلیں الگ الگ سنی جائیں گی، نیب پراسیکیوٹر سردار مظفر نے عدالت کو بتایا ہم تمام چھ اپیلوں کی جلد سماعت چاہتے ہیں جس پر جسٹس محسن اختر کیانی نے ریمارکس دیئے کہ اپیلیں سنی تو الگ الگ ہی جائیں گی،نوازشریف کی بریت کیخلا ف اپیل جلد سننے کا کوئی جواز نہیں۔جسٹس عامر فاروق نے کہا کہ بریت اور سزا والی اپیلوں کو الگ الگ ہی دیکھا جائیگا۔بعدازاں عدالت نے اپیلیں جلد سننے کی نیب درخواستوں پر سماعت منگل تک ملتوی کرتے ہوئے ریمارکس دیئے کہ رجسٹرار آفس کی رپورٹ دیکھ کر فیصلہ کریں گے۔

اسلام آباد ہائیکورٹ

مزید :

صفحہ اول -