ملک میں مزید 98 اموات،لاہور میں   کورونا مثبت کیسز کی شرح 22فیصد ہو گئی

  ملک میں مزید 98 اموات،لاہور میں   کورونا مثبت کیسز کی شرح 22فیصد ہو گئی

  

 اسلام آباد،لاہور(نیوز ایجنسیاں) کورونا وائرس سے گذشتہ چوبیس گھنٹوں میں 98 افراد جاں بحق ہوگئے، جس کے بعد اموات کی تعداد 15 ہزار 124 ہوگئی،جبکہ 5 ہزار 329 نئے کیسز رپورٹ ہونے سے ملک میں کورونا کے تصدیق شدہ کیسز کی تعداد 7 لاکھ 5 ہزار 517 ہوگئی۔نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے تازہ ترین اعدادوشمار کے مطابق ملک بھر میں اب تک ایک کروڑ 58 لاکھ 4 ہزار 877 افراد کے ٹیسٹ کئے گئے، گذشتہ 24 گھنٹوں کے دوران 49 ہزار 816 نئے ٹیسٹ کئے گئے، اب تک 6 لاکھ 23 ہزار 399 مریض صحتیاب ہوچکے ہیں جبکہ 3 ہزار 942 مریضوں کی حالت تشویشناک ہے۔ادھر صوبہ پنجاب حکومت کی جانب سے جاری کردہ اعدادو شمار کے مطابق دارالحکومت لاہور میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح 22 فیصد کی تشویشناک سطح پر جاپہنچی ہے۔ محکمہ صحت پنجاب کے مطابق صوبے بھر میں بالعموم اور صوبائی دارالحکومت لاہور میں کورونا کے مثبت کیسز کی شرح میں خطرناک حد تک اضافہ ہوا ہے۔ گزشتہ روز لاہور میں کورونا کی تشخیص کیلئے مجموعی طور پر 7 ہزار 10 ٹیسٹ کئے گئے جبکہ ایک ہزار 575 کیسز مثبت نکلے ہیں۔ گزشتہ روز پنجاب میں کورونا سے 62 اموات ہوئیں جن میں سے 28 کا تعلق لاہور سے تھا۔لاہور کے سرکاری اور نجی ہسپتالوں میں کورونا مریضوں میں مز ید اضافہ ہوا ہے، لاہور کے 78 فیصد آئی سی یو اور 70 فیصد آکسیجن وارڈ بھرے ہوئے ہیں۔ دوسری طرف  لاہور ضلعی انتظامیہ کی کورونا ایس او پیز پر عملدرآمد کروانے کیلئے کاررو ا ئیاں جاری ہیں، ایس او پیز پر عملدرآمد نہ کرنیوالوں کو بھاری جرمانے عائد کئے گئے جبکہ مجموعی طور پر 13 دکانیں، سٹورز اور میرج ہالز کو سیل کیا گیا۔ اسسٹنٹ کمشنر سٹی فیصان احمد نے کہا 11 دکانوں کو ایک لاکھ 13 ہزار 500 روپے کے جرمانے عائد کئے گئے۔ چار ریسٹورنٹس اور 3 دکانوں کو سیل کیا گیا۔ اے سی شالیمار نے 11 دکانوں و سٹوروں کو ایک لاکھ 13 ہزار 500 کے جرمانے جبکہ 6 دکانوں کو سیل کیا۔دریں اثنا ء سندھ پولیس کے افسران اور اہلکاروں کو بھی کورونا ویکسین لگانے کا فیصلہ کرتے ہوئے 50 سال تک کے افسران اور اہلکاروں کو رجسٹر ڈ کرانے کا حکم دیدیاگیا۔ڈسٹرکٹ ہیلتھ افسران سے ویکسی نیشن سینٹرز میں خصوصی ڈیسک قائم کرنے کی درخواست کر دی گئی۔ فیلڈ فورس کیساتھ ساتھ دفتری عملے کو بھی ویکسین لگائی جائے گی۔ اس ضمن میں اے آئی جی ویلفیئر نے تمام ڈسٹرکٹ اور رینجز کے افسران کو خط بھی لکھ دیا ہے۔ اب تک سندھ پولیس کے 6 ہزار 366 افسران و اہلکار کورونا سے متاثر ہوچکے ہیں۔

کورونا صورتحال

مزید :

صفحہ اول -