حتمی تبدیلی تفتیش بورڈ کا اعلیٰ سطحی اجلاس،  متعدد کیسز کی سماعت، احکامات جاری

حتمی تبدیلی تفتیش بورڈ کا اعلیٰ سطحی اجلاس،  متعدد کیسز کی سماعت، احکامات ...

  

 ملتان (وقا ئع نگار)  ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس جنوبی پنجاب کیپٹن ر ظفر اقبال اعوان (ستارہ امتیاز) کی جانب سے تشکیل کردہ حتمی تبدیلی تفتیش بورڈ کا اعلی سطح کا اجلاس گزشتہ روز پولیس لائن ملتان میں منعقد ہوا۔اجلاس کی صدارت چیئرمین بورڈ و ریجنل پولیس آفیسر بہاولپور(بقیہ نمبر41صفحہ6پر)

 محمد زبیر دریشک نے کی جبکہ اسسٹنٹ انسپکٹر جنرل ڈسپلن جنوبی پنجاب عمران شوکت اور اسسٹنٹ انسپکٹر جنرل انوسٹی گیشن جنوبی پنجاب حسن افضال نے بطور رکن بورڈ شرکت کی۔انچارج انوسٹی گیشن برانچ انسپکٹر طاہر اعجاز نے اس موقع پر کیسز سماعت کیلئے پیش کئے۔حتمی تبدیلی تفتیش بورڈ نے جنوبی پنجاب کے مختلف شہروں کے سائلین کی درخواستوں پر سماعت کی اور متعدد درخواستوں پر تبدیلی تفتیش کے احکامات جاری کئے۔اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے چیئرمین بورڈ و آر پی او زبیر دریشک نے کہا کہ اس خطے کے عوام کو جنوبی پنجاب پولیس آفس کے مکمل فعال ہونے سے انکی دہلیز پر انصاف مل رہا ہے۔آئی جی پنجاب کی جانب سے اختیارات کی منتقلی کے بعد جنوبی پنجاب میں پہلی مرتبہ  تبدیلی تفتیش کا بورڈ مکمل فعال کیا گیا ہے اور شہریوں کی  درخواستیں لاہور جانے کے بجائے انکی دہلیز پر سماعت کرکے تبدیلی تفتیش کی جارہی ہے جو کہ بہت بڑا ریلیف ہے۔زبیر احمد دریشک نے مزید کہا کہ تبدیلی تفتیش بورڈ ابتدائی تفتیش میں خامیاں سامنے آنے پر متعلقہ پولیس افسران کے خلاف محکمانہ کارروائی کی بھی سفارش کرے گا تاکہ کوئی اپنے اختیارات سے تجاوز کرتے ہوئے انصاف کو پامال نہ کرسکے۔اس موقع پر اسسٹنٹ انسپکٹر جنرل ڈسپلن جنوبی پنجاب عمران شوکت کا کہنا تھا کہ ایڈیشنل انسپکٹر جنرل پولیس جنوبی پنجاب کیپٹن ر ظفر اقبال اعوان کے وژن کے تحت ماہانہ بنیادوں پر تبدیلی تفتیش کے بورڈ کا انعقاد کیا جائے گا تاکہ شہریوں کو انصاف کی فراہمی میں تعطل پیدا نہ ہوسکے۔عمران شوکت نے کہا کہ جنوبی پنجاب کے تفتیشی افسران کو سختی سے ہدایت کی گئی ہے کہ وہ تھانے کی سطح پر ابتدائی تفتیش میں شہریوں کے کیسز کو میرٹ پر ڈیل کریں تاکہ عوام کو انصاف کیلئے دیگر دروازے کھٹکھٹانے نہ پڑیں۔اس موقع پر تبدیلی تفتیش بورڈ کے فیصلوں پر مدعیوں نے اظہارِ اطمینان کرتے ہوئے کہا کہ جنوبی پنجاب پولیس آفس کے قیام سے انکا دیرینہ مطالبہ پورا ہوا ہے اور انصاف کی راہ میں حائل رکاوٹیں دور ہوئیں۔

احکامات جاری

مزید :

ملتان صفحہ آخر -