کراچی میں لوڈ مینجمنٹ کی ضرورت نہیں پڑے گی، کے الیکٹرک 

کراچی میں لوڈ مینجمنٹ کی ضرورت نہیں پڑے گی، کے الیکٹرک 

  

کراچی(آئی این پی) کراچی الیکٹرک سپلائی کمپنی(کے الیکٹرک)کے چیف ایگزیکٹو آفیسر مونس علوی نے کہا  ہے کہ نیشنل گرڈ سے کراچی کو اب 650کے بجائے 1100میگاواٹ بجلی ملا کریگی، اب کراچی میں لوڈ مینجمنٹ کرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی، عید کے دنوں میں پورے شہر میں کہیں لوڈشیڈنگ نہیں کی جائے گی،  رمضان میں 75 فیصد فیڈرز کو لوڈ شیڈنگ سے مستثنیٰ رکھا جائے گا۔جمعرات کوکراچی میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے سی ای او کے الیکٹرک مونس علوی کا کہنا تھا کہ ہمارا معاہدہ گیس کے حوالے سے پی ایل ایل سے ہوا ہے،نیشنل گرڈ سے 650کے بجائے 1100میگاواٹ بجلی شہر کوفراہم کی جائے گی، 900میگاواٹ کے بن قاسم پاور پلانٹ پر 70فیصد کام کرلیا گیا ہے۔مونس علوی کا کہنا تھا کہ 190ایم ایم سی ایف ڈی گیس فراہم کی جائے گی، 220کے وی جامشورو کے ڈی اے ڈبل سرکٹ پر تمام کام مکمل ہوگیا ہے۔ ترجمان کے الیکٹرک سعدیہ داداکا کہنا تھا کہ اب کراچی میں لوڈ مینجمنٹ کرنے کی ضرورت نہیں پڑے گی، عید کے دنوں میں پورے شہر میں کہیں لوڈشیڈنگ نہیں کی جائے گی اور  رمضان میں 75 فیصد فیڈرز کو لوڈ شیڈنگ سے مستثنی رکھا جائے گا۔ سعدیہ داداکا کہنا تھا کہ اس منصوبے میں این ٹی ڈی سی کے ساتھ مل کر کام کیا ہے، آج صبح  این ٹی ڈی سی سے450 میگاواٹ اضافی بجلی اپنے سسٹم میں شامل کرنے کی منظوری مل گئی ہے،کل 1100میگاواٹ این ٹی ڈی سی سے کراچی والوں کو بجلی مل سکے گی۔ان کا کہنا تھا کہ  اپریل مئی میں بجلی کی طلب 2900 سے 3000 میگاواٹ تک جاسکتی ہے،کراچی کے صارف کو ہر ممکن طریقے سے بجلی فراہم کی جائے گی،زیادہ سے زیادہ بجلی کی طلب 3300 میگاواٹ تک جاسکتی ہے۔

کے الیکٹرک  

مزید :

پشاورصفحہ آخر -